175 کلومیٹر طویل الریاض میٹرو پراجیکٹ کا افتتاح

منصوبے کی تکمیل سے شہری ٹرانسپورٹ کی سہولت میں بہتری آئے گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی دارالحکومت الریاض کے ترقیاتی ادارہ (اے ڈی اے) کے تحت میٹرو پراجیکٹ کا آج اتوار سے باقاعدہ افتتاح کردیا گیا ہے۔ گورنر ریاض شہزادہ خالد بن بندر بن عبدالعزیز نے ادارہ ترقیات کے ہیڈ کوارٹرز میں اس منصوبے کا افتتاح کیا ہے۔

الریاض میٹرو منصوبے کے تحت چھے روٹس پر 175 کلومیٹر طویل ریلوے لائن تعمیر کی جائیں گی اور اس سے سعودی دارالحکومت کے پبلک ٹرانسپورٹ سسٹم میں نمایاں بہتری آئے گی۔

الریاض ترقیاتی ادارہ کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان کے مطابق ''ریاض میٹرو پراجیکٹ کے تحت شہر کے گنجان آباد حصوں شہری مرکز، سرکاری دفاتر اور تجارتی مراکز کو ملایا جائے گا۔ اس کےعلاوہ شاہ خالد بین الاقوامی ہوائی اڈے، شاہ عبداللہ معاشی مراکز اور بڑی جامعات تک رسائی کے لیے لائنز تعمیر کی جائیں گی''۔

ادارہ ترقیات نے اس منصوبے کی تعمیر کے لیے عالمی تعمیراتی فرموں کو بولیاں جمع کرانے کی دعوت دی تھی اور چار فرموں کی بولیوں کو منظور کیا گیا ہے۔

مئی 2013ء میں اے ڈی اے نے برطانوی کمپبنی ضحیٰ حدید آرکیٹکٹس کے پیش کردہ میٹرو کے تین مرکزی اسٹیشنوں کے ڈیزائن کی منظوری دی تھی۔ یہ تین اسٹیشن شہر کے تجارتی علاقے کے مشرقی کونے میں تعمیر کیے جا رہے ہیں۔

دو اور اسٹیشنوں میں سے ایک علیا میٹرو اسٹیشن کا ٹھیکا جرمنی کی جربر آرکیٹیکٹن اور قصرالحکم اسٹیشن کا ٹھیکا ناروے کی فرم سنو ہیٹا کو دیا گیا ہے۔ میٹرو منصوبے میں شہر میں ہریالی اور سر سبزے کو برقرار رکھنے اور خاص طور پر درختوں کو ضائع ہونے سے بچانے کا اہتمام کیا گیا ہے اور میٹرو کے روٹ کے ساتھ ساتھ آبپاشی کے لیے چینلز بھی بنائے جائیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں