قطر اپنی خارجہ پالیسی تبدیل نہیں کرے گا، حکومتی ذرائع

اخوان المسلمون اور شامی اسلام پسندوں کی حمایت ختم نہیں کی جائیگی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

قطر سعودی عرب سمیت تین عرب ممالک کے سفیر واپس بلائے جانے کے باوجود اپنی خارجہ پالیسی میں تبدیلی نہیں کرے گا۔ قطر حکومت کے قریبی ذرائع کے مطابق دوحا مصر کی سب سے بڑی اور پرانی جماعت اخوان المسلمون اور شامی اسلام پسندوں کی حمایت ختم نہیں کرے گا۔

واضح رہے سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اور بحرین نے ایک غیر معمولی اقدام کرتے ہوئے اپنے سفیروں کو بدھ کے روز قطر سے واپس بلا لیا ہے جبکہ مصر نے اپنے پہلے سے واپس بلائے گئے سفیر دوبارہ قطر بھیجنے سے انکار کر دیا ہے۔

حکومت نے خلیج تعاون کونسل کے تین ارکان کے انتہائی فیصلے کے بعد اپنی کابینہ کیطرف سے اس فیصلے پر افسوس کا اظہار کیا تھا۔ اسی موقع پر قطر نے کہا وہ خلیج تعاون کونسل کی سلامتی کے ساتھ ''کمٹڈ'' ہے اور تین رکن ممالک کے سفیر واپس بلانے کے بعد بھی ان ملکوں سے اپنے سفیروں کو واپس نہیں بلائے گا۔

اب قطر حکومت کے ذرائع نے اخوان اور شامی اسلام پسندوں کی حمایت کا ذکر کیے بغیر کہا کہ یہ اصولوں کا معاملہ ہے اس لیے قطر اپنی خارجہ پالیسی میں تبدیلی نہیں کرے گا، اس لیے کسی دباو کی پروا نہیں ہے۔ ان ذرائع کے مطابق قطر اخوان المسلمون سے تعلق رکھنے والے مہمانوں کی آمد کو بھی نہیں روکے گا اور نہ علامہ یوسف القرضاوی کے حوالے سے بیرونی دباو قبول کرے گا۔

واضح رہے کہ اخوان المسلمون کو مصر کی عبوری حکومت نے دہشت گرد قرار دے دیا ہے جبکہ ممتاز عالم دین علامہ یوسف قرضاوی سے سعودی عرب اور اماراتی حکومتیں خوش نہیں ہیں۔

ذرائع کے مطابق قطری ریاست کے قیام کے ساتھ ہی یہ طے کر لیا گیا تھا کہ پناہ کیلیے کوئی بھی آئے گا تو اسے انکار نہیں کیا جائے گا اور اس کا خیر مقدم کیا جائے گا۔ اس لیے علامہ یوسف قرضاوی سمیت اخوان کے ان مہمانوں کو نکالنے کیلیے کوئی دباو قبول نہیں ہے۔

وزارت خارجہ کے ذرائع نے کہا یہ ہر خود مختار ملک کا حق ہے کہ وہ اپنی مرضی کی خارجہ پالیسی بنائے۔ تاہم ان ذرائع نے واضح کیا کہ قطر کے خلیجی ممالک کے معاملات کے بارے میں کوئی اختلافات نہیں ہیں۔

قطر کے نئے امیر شیخ تمیم بن حماد التہانی نے پچھلے سال ماہ جون میں اقتدار سنبھالا تھا اور ان کا کہنا ہے کہ قطر اپنی خارجہ پالیسی کے حوالے کسی کی ہدایات قبول نہیں کرے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں