.

عراق کی سب سے بڑی آئل ریفائنری پر داعش کا قبضہ

جنگجوٶں نے بیجی ریفائنری کے 75 فیصد حصے کا کنڑول حاصل کر لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق میں سرگرم عسکری تنظیم دولت اسلامیہ عراق وشام (داعش) کے جنگجوؤں نے دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے بیجی شہر میں ملک کی سب سے بڑی آئل ریفائری کے 75 فی صد حصے کا مکمل کنٹرول حاصل کرلیا ہے۔

العربیہ نیوز کے مطابق "داعش" کے عسکریت پسندوں نے آئل ریفائنری پر قبضے سے قبل مارٹر گولوں اور خودکار ہھتیاروں سے حملہ کیا جس کے نتیجے میں ریفائنری میں حفاظتی ڈیوٹی پر موجود بڑی تعداد میں عراقی سیکیورٹی اہلکار و ہلاک اور زخمی ہوئے ہیں۔ گولہ باری سے ریفائنری کے ایک بڑے حصہ میں آگ بھڑک اٹھی اور تیل کا بھاری ذخیرہ نذر آتش ہو گیا۔

خیال رہے کہ بیجی آئل ریفائنری عراق میں تیل صاف کرنے کا سب سے بڑا کارخانہ سمجھا جاتا ہے جس سے یومیہ 900 بیرل تیل صاف کیا جاتا ہے۔

گذشتہ روز داعش کے جنگجوؤں نے ریفائنری کی ایڈمن بلاک پر قبضے کے بعد اس کے چاروں کنٹرول ٹاورز پر بھی قبضہ کر لیا تھا، جس کے بعد ریفائنری کا بڑا حصہ جنگجوؤں کے تسلط میں آ گیا تھا۔

بعد ازاں یہ خبریں بھی آئی تھیں کہ عراقی سیکیورٹی فورسز نے دوبارہ کارروائی کرکے داعشی جنگجوؤں کو پسپا کر دیا ہے اور بیجی آئل ریفائنری پر عراقی سیکیورٹی اداورں کا کنٹرول ہے۔ عراقی فوج کے ایک بیان میں کہا گیا تھا کہ داعش نے آئل ریفائنری پر قبضے کے لیے حملہ کیا تھا تاہم جوابی فضائی حملے میں دشمن بھاری جانی نقصان کے ساتھ پسپا ہو گیا۔