امریکی لڑاکا ہیلی کاپٹرجلد سعودی فوج کو مہیا کیے جائیں گے

سعودی وزیر برائے نیشنل گارڈز کی امریکی وزیر دفاع سے ملاقات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کے وزیر برائے نیشنل گارڈزشہزادہ متعب بن عبداللہ بن عبدالعزیز نے کہا کہ ہے رواں سال کے اختتام سے پہلے امریکی ساختہ بلیک ہاک اور اپاچی جنگی ہیلی کاپٹر سعودی فوج کے حوالے کردیے جائیں گے۔

سعوی وزیر نے یہ بات امریکی دورے کے دوران امریکی وزیر دفاع چک ہیگل سے ملاقات کے بعد واشنگٹن میں ایک نیوز کانفرنس کے دوران کہی۔ انہوں نے کہا کہ امریکی وزیردفاع سے ہوئی ملاقات میں دونوں ملکوں کے مابین دفاعی تعاون بڑھانے سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر تفصیل سے تبادلہ خیال کیا گیا۔ شہزادہ متعب نے بتایا کہ امریکا اور سعودی عرب کے مابین دفاعی تعاون کی شراکت داری 1972ء سے قائم ہے اور دونوں ملک اسے مزید مضبوط اور مستحکم بنانے کے لیے کوشاں ہیں۔

شہزادہ متعب بن عبداللہ کا کہنا تھا کہ امریکا کے ساتھ اپاچی اور بلیک ہاک جنگی ہیلی کاپٹروں کی ڈیل طے پا چکی ہے۔ معاہدے کے تحت سال رواں کے اختتام تک یہ جنگی ہیلی کاپٹر سعودی عرب کی نیشنل گارڈز کو فراہم کردیے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ شاہ عبداللہ بن عبدالعزیز محکمہ دفاع اور داخلی سیکیورٹی کے تمام اداروں کو جدید خطوط پر مزید مستحکم اور مضبوط بنانے کے خواہاں ہیں۔ اس مقصد کے حصول کے لیے سیکیورٹی فورسز کو تمام جدید ترین دفاعی سہولیات سے آراستہ کیا جائے گا۔

دہشت گردی کےخلاف عالمی جنگ میں سعودی عرب کی شراکت کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں سعودی وزیر کا کہنا تھا کہ ان کا ملک کئی سال سے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں فرنٹ لائن پر ہے۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب دہشت گردی کے خلاف امریکا دیگر اتحادیوں سے مل کر بھرپور کوششیں جاری رکھے گا۔ دہشت گردی کے خلاف تازہ عالمی مہم کے بھی جلد مثبت نتائج سامنے آئیں گے۔

ایک سوال کے جواب میں شہزادہ متعب بن عبداللہ کا کہنا تھا کہ عراقی سیکیورٹی فورسز اپنے ملک میں دہشت گردی سے نمٹنے کی صلاحیت رکھتی ہیں مگرعراق اور شام جیسے شورش زدہ ملکوں میں اضافی فورسز دہشت گردی کو شکست دینے میں معاون ثابت ہوسکتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں