مصر: سیناء میں بم دھماکے میں دو پولیس اہلکار ہلاک

داعش سے وابستہ گروپ نے بم حملے کی ذمے داری قبول کر لی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مصر کے شورش زدہ علاقے جزیرہ نما سیناء میں سڑک کے کنارے نصب بم کے دھماکے میں دو پولیس اہلکار ہلاک اور سولہ زخمی ہوگئے ہیں۔دولت اسلامیہ عراق وشام(داعش) سےوابستہ گروپ صوبہ سیناء نے اس بم حملے کی ذمے داری قبول کر لی ہے۔

مصری وزارت داخلہ کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ شمالی سیناء میں پولیس کی گاڑیوں کے قافلے کو بم حملے میں نشانہ بنایا گیا ہے۔مصر میں داعش سے وابستہ گروپ نے ٹویٹر پر ایک بیان میں کہا ہے کہ اس کے جنگجوؤں نے پولیس اہلکاروں بم حملہ کیا ہے۔وہ اس وقت ایک چیک پوائنٹ قائم کرنے کی کوشش کررہے تھے۔

مصری فوج نے گذشتہ بدھ کو شمالی سیناء میں داعش کے جنگجوؤں کے خلاف معرکہ حق الشہید (آپریشن شہید کا حق) کے نام سے جاری بڑی مہم ختم کرنے کا اعلان کیا تھا۔فوج نے سولہ روز اس معرکے کے دوران بیسیوں جنگجوؤں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا تھا۔

واضح رہے جزیرہ نما سیناء میں جنگجوؤں نے مصر کے پہلے منتخب صدر ڈاکٹر محمد مرسی کی جولائی 2013ء میں برطرفی کے بعد سے سکیورٹی فورسز کے خلاف جنگ برپا کررکھی ہے اور وہ آئے دن فوج اور پولیس اہلکاروں پر حملے کرتے رہتے ہیں۔مصری حکام کا کہنا ہے کہ ان حملوں میں اب تک سیکڑوں سکیورٹی اہلکار ہلاک ہوچکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں