.

شام : عراقی ملیشیا کے کمانڈر سمیت 4 ایرانی فوجی ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایرانی میڈیا نے شام میں کم از کم 4 ایرانی فوجی اہل کاروں کے ہلاک ہونے کی خبر دی ہے جن میں شیعہ عراقی ملیشیا "عصائب اہل الحق" کا عسکری کمانڈر بھی شامل ہے۔ یہ تمام افراد جمعے کے روز حلب شہر میں شامی اپوزیشن گروپوں کے ساتھ لڑائی کے دوران مارے گئے۔

ایرانی ویب سائٹوں کے نزدیک شیعہ عراقی ملیشیا عصائب اہل الحق کا عسکری کمانڈر محمد باقر سلیمانی.. ایرانی پاسداران انقلاب کے بریگیڈ فیلق القدس کے کمانڈر قاسم سلیمانی کے قریب سمجھا جاتا ہے۔

شام کا بحران شروع ہونے کے بعد سے عراقی ملیشیا عصائب اہل الحق کے سیکڑوں جنگجو شام میں لڑائی میں مصروف ہیں۔

ایران نیوز ایجنسیوں کے مطابق پاسداران انقلاب سے تعلق رکھنے والے محمد بورہنک کو جمعے کے روز تہران کے جنوب میں دفن کر دیا گیا۔ اس کے علاوہ ایران عراق جنگ میں شرکت کرنے والے حسين رئيسی کو بھی دفن کر دیا گیا جو شام کے شہر حلب میں ایک مشن کے دوران مارا گیا۔

ایرانی نیوز ایجنسی "فارس" کے مطابق حلب کے شمال میں ہلاک ہونے والے حسين علی محمدی کو جمعے کے روز ایران کے شمال مشرقی شہر سمنان میں دفن کر دیا گیا۔

دوسری جانب "شہید نيوز" ویب سائٹ نے جمعے کے روز ُقم شہر میں 12 جنگجوؤں کی تدفین سے متعلق ایک تصویری رپورٹ جاری کی ہے۔ مذکورہ جنگجوؤں کا تعلق افغان ملیشیا (فاطميون) اور پاکستانی ملیشیا (زينبيون) سے ہے جو حلب شہر میں حالیہ معرکوں کے دوران مارے گئے۔