.

لافروف کی امیر کویت سے ملاقات، قطری بحران پر بات چیت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روسی وزیرخارجہ تین روزہ دورے کے پہلے مرحلے پر گذشتہ روز کویت پہنچے جہاں انہوں نے امیر کویت الشیخ صباح الاحمد الجابر الصباح سے ملاقات کی۔ ملاقات میں عرب ممالک کے مسائل، علاقائی امور بالخصوص قطر کے بحران تفصیلی بات چیت کی گئی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کےمطابق روسی وزیر خارجہ سوموار کواعلیٰ اختیاراتی وفد کے ہمراہ کویت پہنچے تھے۔ کویتی قیادت سے ملاقات کے بعد وہ قطر اور متحدہ عرب امارات کا بھی دورہ کریں گے۔ لافروف 30 اگست کو واپس ہوں گے۔

امیر کویت الشیخ جابرالصباح سے ملاقات کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے روسی وزیر خارجہ نے کہا کہ ماسکو قطری بحران کے حل کے لیے کویت کی ثالثی کا حامی ہے اور اس میں ہرممکن مدد کے لیے بھی تیار ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم تمام خلیجی دوستوں کو تمام تر اختلافات مذاکرات کی میز پرحل کرنے پر زور دیتے رہیں گے۔

قبل ازیں انہوں نے کویتی وزیراعظم الشیخ جابر المبارک الاحمد الصباح سے بھی ملاقات کی۔ اس ملاقات میں بھی علاقائی اور عالمی امور بالخصوص کویت اور ماسکو کے درمیان تعلقات کے فروغ پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

کویت کی سرکاری خبر رساں ایجنسی کے مطابق روسی وزیرخارجہ اور ان کے ہمراہ آئے وفد کا کویت میں شاندار استقبال کیا گیا۔ بعد ازاں روسی وزیرخارجہ اور کویتی قیادت کے درمیان ہونے والی بات چیت میں باہمی دلچسپی کے امور اور تمام شعبوں میں تعاون کے فروغ پر غور کیا گیا۔ خبررساں ایجنسی کے مطابق کویت اور روس کے درمیان تاریخی تعلقات اور اس کی اہمیت پر بھی بات چیت کی گئی۔

قبل ازیں ماسکو کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا تھا کہ روس قطری بحران میں ثالثی نہیں کرے گا تاہم روسی قیادت خلیجی دوستوں میں اختلافات دور کرنے کی تمام مساعی کا خیر مقدم کرتے ہوئے ہر ممکن حمایت کو یقینی بنائے گی۔