.

مصر : لیڈی ڈرائیور کے ساتھ خواتین کے لیے مخصوص بسیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر میں ایک ٹرانسپورٹ کمپنی نے پبلک ٹرانسپورٹ میں ہراسیت کے واقعات کو روکنے کے لیے ایک نیا تجربہ کیا ہے تا کہ خواتین کی محفوظ طریقے سے آمد و رفت میں مدد کی جا سکے۔ کمپنی نے خواتین کے لیے علاحدہ بسیں مختص کی ہیں جب کہ بس ڈرائیور بھی خاتون ہو گی۔

کمپنی کے نائب چیئرمین عمر الانجلیزی نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو بتایا کہ یہ ایک نیا خیال ہے اور خواتین کی راحت اور امان کے واسطے ایک اعلی سطح کی خدمت ہے جس کا مقصد ہراسیت کے واقعات پر روک لگانا ہے۔ اس واسطے کمپنی نے خواتین کے لیے مخصوص ٹیکسیوں کی طرز پر پبلک ٹرانسپورٹ کی بسیں چلانے کا فیصلہ کیا ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ کمپنی نے ہر اس روٹ پر گاڑی چلانے کا فیصلہ کیا ہے جو خواتین کے لیے مختصر ہو۔ اس کے علاوہ ڈرائیور کے پیشے کے حوالے سے خواتین کو ملازمت کی پیش کش ہے مگر افسوس کی بات یہ ہے کہ اب تک محض تھوڑی تعداد سامنے آئی ہے۔

نائب چیئرمین کے مطابق اس نئی سروس کے استعمال کے لیے خواتین کی حوصلہ افزائی کے واسطے ان بسوں کا کرایہ دیگر عام بسوں کے برابر ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ کمپنی اس وقت خواتین ڈرائیوروں کے ایک گروپ کو تربیت فراہم کر رہی ہے تا کہ انہیں کمپنی میں کام کا موقع مل سکے اور وہ قاہرہ کی رش والی شاہراہوں پر اعتماد کے ساتھ بس چلا سکیں۔ عمر الانجلیزی کے مطابق خواتین مصری معاشرے کا نصف حصہ ہیں لہذا ان کے لیے تمام مطلوبہ امور کی فراہمی کو یقینی بنانا اور ٹرانسپورٹ کے زیادہ سے زیادہ محفوظ اور پر امن وسائل کو فراہم کرنا نا گزیر ہے۔