.

مصری فورسز نے سیناء میں خودکش بم حملہ ناکام بنا دیا،11 دہشت گرد ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کی سکیورٹی فورسز نے جزیرہ نما سیناء میں خودکش کار بم حملے کی ایک سازش ناکام بنا دی ہے، مختلف کارروائیوں میں گیارہ دہشت گردوں کو ہلاک کردیا ہے اور ان کے 20 ٹھکانوں اور متعدد ہیڈکوارٹرز کو تباہ کردیا ہے۔

مصری فوج نے منگل کے روز ایک بیان میں بتایا ہے کہ سکیورٹی فورسز نے خودکش حملے کے لیے بموں سے لدی دو کاروں کو تباہ کردیا ہے اور پختہ اطلاعات کی بنیاد پر دہشت گردوں کے 185 اہداف اور اسلحہ ڈپوؤں پر توپ خانے سے گولہ باری کی ہے۔مصری فورسز نے فوجی وردیوں میں ملبوس اور بارودی بلٹیں باندھے چار دہشت گردوں کو بھی گرفتار کر لیا ہے۔

انھوں نے سیناء کے دارالحکومت العریش میں دہشت گردوں کی ایک خطرناک جگہ کا پتا چلانے کے بعد کارروائی کی ہے اور وہاں ان کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے میں سات مسلح دہشت گرد ہلاک ہوگئے ہیں۔ان کے قبضے سے تین خود کار رائفلیں اور دو بارودی ڈیوائسز برآمد ہوئی ہیں۔

فوج نے ایک تہ خانے میں چھپائے گئے ہتھیار اور گولہ بارود برآمد کرنے کی بھی اطلاع دی ہے اور کہا ہے کہ مشتبہ دہشت گردوں کے 375 خفیہ ٹھکانے ، ایک پناہ گاہ ، ایک اسٹور اور متعدد سرنگیں تباہ کردی گئی ہیں۔

ان جگہوں سے بھاری مقدار میں ہتھیار اور گولہ بارود ،دستی بم ، منشیات ، راشن ، ایندھن اور گاڑیوں کے فاضل پرزہ جات برآمد ہوئے ہیں۔

مصری فوج نے سیناء اور دوسرے علاقوں میں جاری کارروائی میں مزید 641 جرائم پیشہ عناصر کو گرفتار کر لیا ہے۔اس طرح اب تک گرفتار کیے گئے مشتبہ افراد کی تعداد 2235 ہوچکی ہے۔ان میں حکام کو مطلوب 547 افراد بھی شامل ہیں ۔ان کو مختلف عدالتوں سے سزائی سنائی جاچکی ہیں۔

فوج کے بیان کے مطابق فضائیہ نے ملک کے جنوب میں واقع ایک تزویراتی روٹ پر گولہ بارود سے لدی دو گاڑیوں کو بمباری کرکے تباہ کردیا ہے۔یہ دونوں گاڑیاں مصری علاقے میں دراندازی کی کوشش کررہی تھیں۔ملک کی مغربی سرحد پر سرحدی محافظوں نے 30 آتشیں ہتھیار پکڑ لیے ہیں ۔انھیں غیرقانونی طور پر مصری علاقے میں لانے کی کوشش کی گئی تھی۔ سکیورٹی فورسز نے مختلف قومیتوں کے حامل 419 در اندازوں کو گرفتار کر لیا ہے۔

بیان میں بتایا گیا ہے کہ دہشت گردوں کے ساتھ مختلف جھڑپوں میں ایک افسر اور دوفوجی مارے گئے ہیں اور ایک افسر ، دو لیفٹیننٹ اور چار فوجی زخمی ہوگئے ہیں۔