.

فلسطینی صدر محمود عباس کی اسپتال سے فراغت میں تاخیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فلسطینی صدر محمود عباس کی بعض نامعلوم وجوہ کی بنا پر اسپتال سے فراغت میں تاخیر کردی گئی ہے۔

محمود عباس ایک ہفتہ قبل نمونیے کا شکار ہوگئے تھے اور انھیں علاج کے لیے اسپتال داخل کیا گیا تھا۔انھیں اتوار کی سہ پہر اسپتال سے فارغ کیا جانا تھا لیکن فلسطینی صدر کے دفتر کے بیان کے مطابق وہ اسپتال ہی میں رہیں گے۔

چند روز قبل ان کی اسپتال کے وارڈوں میں چہل قدمی کرتے اور اخبار پڑھتے ہوئے تصاویر بھی جاری کی گئی تھیں۔فلسطینی صدر کی صحت کے بارے میں مختلف قیاس آرائیاں کی جارہی ہیں اور یہ کہا جارہا ہےکہ ان کی صحت بہتر نہیں ہے۔

انھیں 20 مئی کو کان کے آپریشن کے بعد بخار ہوگیا تھا اورپھر بعض پیچیدگیاں پیدا ہونے پر انھیں اسپتال میں داخل کیا گیا تھا۔فلسطینی حکام نے بعد میں اس امر کی تصدیق کی تھی کہ وہ نمونیے میں مبتلا ہیں اور ان کا علاج کیا جارہا ہے۔

واضح رہے کہ فروری میں امریکا میں ان کے معمول کے میڈیکل ٹیسٹ ہوئے تھے۔وہ 2005ء میں چار سالہ مدت کے لیے پہلی مرتبہ فلسطین کے صدر منتخب ہوئے تھے۔تب سے وہ دوبارہ انتخاب کے بغیر ہی صدر چلے آرہے ہیں ۔انھوں نے فلسطینی صدارت کے لیے ابھی تک اپنا کوئی جانشین نامزد نہیں کیا ہے۔