تبوک میں شدید بارشیں اور ژالہ باری ، ایک شخص جاں بحق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں تبوک کا صوبہ ان دنوں شدید طوفانی بارشوں کی لپیٹ میں ہے۔ جمعرات کے روز ہونے والی موسلادھار بارش کے ساتھ ژالہ باری بھی دیکھی گئی۔ اس دوران ایک شخص اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھا۔ شہری دفاع کے اہل کاروں نے صوبے بھر میں مختلف امدادی کارروائیوں کے دوران 49 افراد کو بچا لیا۔ کارروائیوں میں ہیلی کاپٹروں نے بھی حصّہ لیا۔

شہری دفاع کے ادارے نے ٹوئیٹر کے ذریعے بتایا کہ ادارے کی سرچ اینڈ ریسکیو ٹیموں نے شمال مغرب میں کنگ فیصل ایئر بیس کے تعاون سے پانی میں پھنسے ہوئے 49 افراد کو نکال لیا۔ مذکورہ افراد کو وادی السرو، شقری اور وادی عفال کے علاقوں میں بچایا گیا۔ علاوہ ازیں شدید بارشوں کے نتیجے میں کم از کم ایک شخص کے جاں بحق ہونے اور دو کے زخمی ہونے کی تصدیق ہوئی ہے۔

آج صبح سویرے ہونے والی طوفانی بارشوں کے دوران چٹانوں سے پتھر گرنے کے نتیجے میں تبوک اور ضباء کے درمیان راستہ بند ہو گیا اور ٹریفک کی آمد و رفت معطل ہو گئی۔ اس موقع پر روڈ سکیورٹی سے متعلق اہل کاروں نے ٹریفک کو بحال کروایا۔ بعد ازاں سڑک پر جمع ہو جانے والے پتھروں کو اٹھانے کا کام شروع کر دیا گیا۔

دوسری جانب تبوک کے گورنر شہزادہ فہد بن سلطان بن عبدالعزیز نے صوبے میں طوفانی بارشوں کے نتیجے میں پیدا ہونے والی صورت حال کا جائزہ لیا۔ گورنر نے متعلقہ سرکاری انتظامی اداروں کو ہدایت کی کہ حالات سے نمٹنے کے لیے ہنگامی منصوبوں پر عمل درامد کو یقینی بنایا جائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں