تحریک فتح نے غزہ میں جماعت کے ترجمان پر تشدد کا ذمہ دار حماس کو قراردے دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی میں نامعلوم افراد نے تحریک فتح کے ترجمان عاطف ابوسیف کو تشدد کا نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں وہ شدید زخمی ہوگئے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق نامعلوم نقاب پوش افراد نے عاطف ابو سیف کو تشدد کا نشانہ بنا کر پھینک دیا، جس کے نتیجے میں انہیں سخت چوٹیں آئی ہیں۔

ادھر فلسطینی صدر مشیر برائے نوجوانان مامون سویدان نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ابو سیف کو شدید زخمی حالت میں اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔ ان کی حالت خطرے میں ہے۔ ان کے سر اور جسم کے دوسرے حصوں پر گہری چوٹیں آئی ہیں۔

خبر رساں ادارے'وفا' کے مطابق سویدان نے کہا کہ ابو سیف پر حملہ غزہ میں حکمراں حماس کی کارروائی ہے۔ حماس اس طرح کے اوچھے اور انتقامی حربوں کے ذریعے قومی مصالحتی کوششوں کو سبوتاژ کررہی ہے۔

غزہ میں العربیہ کے نامہ نگار کے مطابق حماس کے سیکیورٹی اہلکاروں نے بیت لاھیا اور البریج پناہ گزین کیمپوں میں شہریوں کو احتجاج سے روک دیا۔

قبل ازیں حماس نے فلسطینی ریڈیو اینڈ ٹیلی ویژن کارپوریشن کےڈائریکٹر رافت القدرہ کو گرفتار کرلیا تھا۔
تحریک حماس پر غزہ میں فتح کی قیادت پر پابندیاں عاید کرنے اور جماعت کےمتحرک اور سرکردہ رہ نمائوں کو گھروں میں جبری طور پر نظر بند کرنے کا الزام عاید کیا جاتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں