سعودی ٹیلی وژن پر پہلی مرتبہ حرم مکی کی نماز تراویح کب نشر ہوئی ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی ٹیلی وژن کے آغاز کے بعد ابتدائی سالوں میں نماز تراویح کو براہ راست نشر نہیں کیا جاتا تھا۔ نماز تراویح کے وقت پروگراموں کا سلسلہ روک کر ایک غیر متحرک سلائیڈ لگا دی جاتی تھی جس پر "نماز کی ادائیگی کا وقفہ" لکھا ہوتا تھا۔ اس کے بعد 1393 ہجری میں سعودی ٹیلی وژن پر براہ راست اذان نشر ہونے کا سلسلہ شروع ہوا اور نماز کی ادائیگی کے وقت نشریات کو روک دیا جاتا۔

بعد ازاں 1397 ہجری میں رمضان کے آخری دنوں میں مسجد حرام میں شیخ عبدالعزیز السبیل کی امامت میں ہونے والی نماز تراویح اور ختم قرآن کو براہ راست نشر کیا گیا۔ یہ پہلا موقع تھا جب حرم مکی سے نماز تراویح کو براہ راست ٹی وی پر نشر کیا گیا۔ البتہ سال 1400 ہجری سے پورے رمضان نماز تراویح کو براہ راست نشر کرنے کی ابتدا ہوئی۔

اس کے نتیجے میں لوگوں کی ایک بڑی تعداد کو حرم مکی میں نماز عشاء اور تراویح میں آئمہ کرام کی خوب صورت اور دل موہ لینے والی تلاوت کو سننے کا موقع ملا۔

اب ہر سال دنیا بھر میں لوگوں کی ایک بڑی تعداد رمضان مبارک میں سعودی ٹی وی کے ذریعے حرمین شریفین میں نماز تراویح کو سننے اور ان روح پرور اجتماعات کو دیکھنے کا انتظار کرتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں