.

’’پاسداران انقلاب نے خلیج عرب میں کسی برطانوی آئل ٹینکر کو نہیں روکا‘‘

بے وقعت دعوؤں کے ذریعے کشیدگی کو ہوا دینے کی کوشش ہو رہی ہے: جواد ظریف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران کی نیم سرکاری خبر رساں ایجنسی ’فارس‘ کا کہنا ہے کہ سپاہ پاسداران انقلاب نے خلیج عرب میں برطانوی آئل ٹینکر پر قبضے سے متعلق امریکی دعویٰ مسترد کر دیا ہے۔

امریکی حکام نے دعویٰ کیا تھا کہ بدھ کے روز خلیج عرب میں ایک برطانوی آئل ٹینکر کو پانچ کشتیوں نے روکنے کی کوشش کی۔ کشتیوں کے بارے میں خیال ظاہر کیا جاتا ہے کہ ان کا تعلق ایرانی پاسداران انقلاب سے تھا۔ کشتی پر سوار عملے نے جہاز کو ایرانی سمندری حدود میں رکنے پر مجبور کیا، تاہم علاقے میں موجود برطانوی لڑاکا طیاروں کی وارننگ کے بعد ایرانی کشتیاں دور چلی گئیں۔

ادھر ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف نے فارس نیوز ایجنسی کے ذریعے ایک بیان میں کہا ہے کہ ایرانی کشتیوں کی جانب سے خلیج عرب میں برطانوی آئیل ٹینکر کو روکنے سے متعلق لندن کا دعویٰ بے وقعت بات ہے۔

فارس کے مطابق جواد ظریف نے کہا کہ بظاہر آئل ٹینکر گذر گیا ہے۔ جو کچھ کہا جا رہا ہے اور جو دعوے کئے جا رہے ہیں، ان کا مقصد تناؤ پیدا کرنا ہے اور ایسے دعوؤں کی کوئی وقعت نہیں۔