حسن نصر اللہ کے زیر انتظام خفیہ تنظیم عالمی دہشت گردی کی منصوبہ بندی کر رہی تھی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیلی اخبار "ہآرٹز" نے انکشاف کیا ہے کہ لبنانی ملیشیا حزب للہ کی ایک خفیہ مسلح تنظیم بھی ہے جو "یونٹ 910" کے نام سے جانی جاتی ہے۔ اخبار کے مطابق یہ تنظیم یورپ، شمالی امریکا اور مشرقی ایشیا میں مسلح کرروائیوں کی منصوبہ بندی کر رہی تھی۔

ہآرٹز کا یہ بھی کہنا ہے کہ بولیویا، قبرص، پیرو، تھائی لینڈ اور برطانیہ میں یونٹ 910 کی بہت سے کارروائیاں ناکام بنا دی گئیں۔ یونٹ کی ایک کامیاب کارروائی 2012 میں بلغاریا میں تھی جس میں دو اسرائیلی سیاحوں کو نشانہ بنایا گیا تھا۔

اسرائیلی اخبار کے مطابق واشنگٹن انسٹی ٹیوٹ میں سینئر محقق میتھیو لیونٹ جو ایف بی آئی کے سابق افسر ہیں .. انہوں نے امریکا میں گرفتار حزب اللہ کے ایک رہ نما علی کورانی کے ساتھ تحقیقات سے حاصل معلومات کی روشنی میں بتایا کہ مذکورہ خفیہ یونٹ 2008 میں حزب اللہ کے رہ نما عماد مغنیہ کی ہلاکت کے بعد قائم کیا گیا۔ یہ یونٹ براہ راست حزب اللہ کے سکریٹری جنرل حسن نصر اللہ کے زیر انتظام ہے۔

ہآرٹز کے مطابق کورانی نے بتایا کہ یونٹ براہ راست نصر اللہ کے تابع ہے مگر اسے احکامات تہران سے موصول ہوتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں