.

امتحان میں بیٹھنے کی اجازت نہ ملنے پرطالبہ اسکول میں دستی بم لے آئی

یمن میں پیش آنے والے واقعے میں اسکول کی طالبات خوف زدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے وسط میں واقع 'اِب' گورنری میں لڑکیوں کے ایک اسکول میں اس وقت ہنگامہ برپا ہوگیا جب ایک طالبہ کوامتحان میں بیٹھنے کی اجازت نہ ملنے پراس نے اسکول کو بم سے اڑانے کی دھمکی دے ڈالی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق یہ واقعہ المشنہ ڈاریکٹوریٹ میں اس وقت پیش آیا جب ایک گرلز اسکول کی انتظامیہ نے فیس کی عدم ادائیگی پر ایک طالبہ کو سیکنڈ ٹرم کے امتحان میں شامل ہونے سے روک دیا۔ وہ اس وقت وہاں سے چلی گئی اور کچھ دیر بعد ایک دستی بم لے کرآئی اور اسکول کو اس بم سے اڑانے کی دھمکی دی۔ اس پرہرطرف اسکول میں افراتفری پھیل گئی۔ اہل علاقہ کو جب اس معاملے کا پتا چلا تو اُنہوں نے بچیوں کو بچانے کے لیے اسکول پردھاوا بول دیا۔ لوگ دروازے توڑ کر اسکول میں داخل ہوگئے اور وہاں سے بچیوں کو باہر نکال لیا۔

دستی بم سے حملے کی دھمکی کے بعد اسکول میں پیدا ہونے والی صورت حال کی ایک فوٹیج بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہے جس میں طالبات کو خوف زدہ دیکھا جا سکتا ہے۔