.

حزب اللہ ، حوثی ملیشیا اور حماس تنظیم میرے باپ کے قتل کا جواب دے گی : زینب سلیمانی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایرانی پاسداران انقلاب کی القدس فورس کے مقتول سربراہ قاسم سلیمانی کی بیٹی زینب نے ایران نواز شخصیت پر زور دیا ہے کہ وہ اس کے باپ کے قتل کا انتقام لیں۔

پیر کے روز تہران میں اپنے باپ کی آخری رسومات کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے زینب سلیمانی نے لبنانی ملیشیا حزب اللہ کے سربراہ حسن نصر اللہ، حماس کے سیاسی بیورو کے سربراہ اسماعیل ہنیہ، فلسطینی تنظیم اسلامی جہاد کے سکریٹری جنرل زیاد نخالہ، شامی صدر بشار الاسد، عراقی بدر تنظیم کے سربراہ ہادی العامری اور یمن میں حوثی ملیشیا کے سرغنے عبدالملک الحوثی سے مطالبہ کیا کہ وہ قاسم سلیمانی کے قتل پر جوابی کارروائی کریں۔

اس سے قبل سلیمانی کی بیٹی نے اتوار کے روز اپنے پیغام میں حزب اللہ کے سربراہ کو سلام پیش کرتے ہوئے حسن نصر اللہ سے اپیل کی تھی کہ وہ سلیمانی کے خون کا انتقام لے۔

خیال رہے کہ گذشتہ دو روز کے دوران کئی ایرانی ذمے داران خطے میں تہران کے ایجنٹوں کے ذریعے سلیمانی کے قتل کا انتقام لینے کا عندیہ دے چکے ہیں۔ ایران اپنے ان ایجنٹوں کو "مزاحمتی محور" کا نام دیتا ہے۔

ایرانی پاسداران انقلاب کے سیاسی معاون ید اللہ جوانی نے اتوار کے روز کہا تھا کہ امریکیوں کو نہ صرف ایران بلکہ تمام مزاحمتی محوروں کی جانب سے مقابلے کا سامنا کرنا ہو گا۔ جوانی کا اشارہ خطے میں ایران کے حمایت یافتہ گروپوں اور ملیشیاؤں کی جانب تھا۔ ان میں فلسطین میں حماس تنظیم، لبنان میں حزب اللہ ملیشیا اور عراق میں الحشد الشعبی ملیشیا شامل ہیں۔

یاد رہے کہ القدس فورس کے مقتول سربراہ قاسم سلیمانی کو منگل کی صبح ایران کے جنوب مشرقی صوبے کرمان میں اس کے آبائی علاقے میں دفن کیا گیا۔