.

بیروت بندرگاہ پر دھماکوں سے لبنانی معیشت کو 15 ارب ڈالر کا نقصان پہنچا: صدر عون

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لبنان کے صدر میشل عون نے کہا ہے کہ بیروت بندرگاہ پر دھماکوں کے نتیجے میں ہونے والے نقصانات 15 ارب ڈالر سے زیادہ ہیں۔

لبنان کی قومی انفارمیشن ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق صدر میشل عون نے اسپین کے بادشاہ فیلیپ VI کے ساتھ فون پر گفتگو کی۔ انہوں‌ نے بیروت بندرگاہ پرہونے والے دھماکوں کے دوسرے مادی نقصانات اور متاثرہ مقامات کی تعمیر نو کے لیے تعمیراتی مواد کی ضرورت کا ذکر کیا اور کہا کہ بیروت بندرگاہ پر ہونے والے دھماکوں کے معاشی نقصانات کا تخمینہ 15 ارب ڈالر سے زیادہ لگایا گیا ہے۔

بیروت کے گورنر مروان عبود نے "الحدث" چینل کو اپنے ایک سابقہ انٹرویو میں کہا تھا کہ بندرگاہ دھماکے کے نقصانات 10 سے 15 ارب ڈالر کے درمیان ہیں۔اس سے قبل بندرگاہ پر ہونے والے دھماکوں سے 3 سے پانچ ارب ڈالر کے درمیان نقصانات کا اندازہ لگایا گیا تھا۔
امریکی انسٹی ٹیوٹ فار ڈیفنس آف ڈیموکریسی کی رپورٹ کے مطابق ان نقصانات سے لبنان کی پریشانی میں اضافہ ہوا ہے۔ لبنان کو اپنی معیشت کو بچانے کے لیے 93 ارب ڈالر تک کی ضرورت ہے۔

نئی رپورٹ سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ بیروت کو لبنانی بینکاری کے شعبے کو مستحکم کرنے کے لیے 67 ارب ڈالر کے نئے فنڈز کی ضرورت ہے۔ اس میں مرکزی بینک کو ہونے والے 22 ارب ڈالر کا نقصان شامل نہیں ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں