سعودی عرب :اپنی ماں کے قاتل دو داعشی دہشت گردوں‌ کو سزائے موت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کی ایک فوج داری عدالت نے شدت پسند گروپ میں شامل دو حقیقی بھائیوں کو جون 2016ء کو اپنی ماں کو قتل کرنے پر سزائے موت سنائی ہے۔

العربیہ ڈاٹ‌ نیٹ کے مطابق سعودی عرب سے تعلق رکھنے والے دونوں ملزمان پر ماں کو قتل کرنے کے ساتھ ساتھ تکفیری نظریات اختیار کرنے، کتاب و سنت اور اجماع امت سے انحراف، حاکم وقت کی نافرمانی، اپنے خاندان سے بغاوت، علما کے مشوروں کو نظرانداز کرنے اور اپنے مذموم مقاصد کے حصول کےخاطر اپنی ماں کو جان سے مارنے کے الزامات عاید کیے گئے ہیں۔

عدالت کی طرف سے جاری کردہ فیصلے کی تفصیل میں کہا گیا ہے کہ ملزمان نے عدالت کے رو برو اپنی بوڑھی ماں‌ کو قتل کرنے کا اعتراف کیا ہے۔ ان میں سے ایک ملزم نے اپنی ماں کے منہ پر ہاتھ رکھ کر اسے خاموش کیا اور دوسرے نے تیز دھارے آلے سے اس کے جسم پر وار کیے جس کے نتیجے میں وہ جاں بحق ہو گئی۔

اس کے علاوہ ملزمان نے اپنی ماں کے قتل کے قصد سے اس کے سراور جسم کے دوسرے حصوں پر ہتھوڑے سے بھی وار کیے۔

خیال رہے کہ داعشی دہشت گردوں کے ہاتھوں اپنی ماں کے قتل کا مجرمانہ واقعہ چار سال قبل پیش آیا تھا۔ انہوں‌ نے اپنی 67 سالہ ماں اور 73 سالہ باپ کو الریاض کی الحمرا کالونی میں قتل کر دیا تھا۔ اس کے علاوہ انہوں‌ نے اپنے ایک 22 سالہ بھائی پر بھی قاتلانہ حملہ کیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں