.

اسرائیل کی منظوری کے بعد کووِڈ-19 کی پہلی کھیپ غربِ اردن سے غزہ روانہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیل نے بالآخر اپنی حریف فلسطینی جماعت حماس کے زیر انتظام غزہ کی پٹی میں کووِڈ-19 کی ویکسین بھیجنے کی منظوری دے دی ہے۔اس کے بعد ایک ہزار خوراکوں پر مشتمل پہلی کھیپ غربِ اردن سے غزہ پہنچائی جارہی ہے۔

اسرائیل نے غزہ پٹی کی برّی ، بحری اور فضائی ناکا بندی کررکھی ہے۔اس کو دنیا کی سب بڑی کھلی جیل قرار دیا جاتا ہے۔اس علاقے میں قریباً 20 لاکھ فلسطینی کسمپرسی کی حالت میں رہ رہے ہیں۔

حماس کے زیراہتمام وزارتِ صحت نے غزہ میں اب تک کرونا وائرس کے 53 ہزار سے زیادہ کیسوں کی تصدیق کی ہے۔ان میں سے 538 مریض وفات پاچکے ہیں۔

فلسطینی حکام کا کہنا ہے کہ پہلی کھیپ میں آنے والی ویکسین کی خوراکیں ایک ہزار افراد کے لیے کافی ہوں گی۔

اسرائیل نے پہلے مرحلے میں روسی ساختہ کووِڈ-19 کی ویکسین سپوتنک پنجم فلسطینی اتھارٹی کو مہیا کی ہے۔یہ ویکسین پہلے غربِ اردن میں بھیجی گئی ہے۔اسرائیل کے دائیں بازو کے انتہاپسند سیاست دان یاہو حکومت کے فلسطینیوں کو ویکسین مہیا کرنے کے فیصلے پر کڑی نکتہ چینی کررہے ہیں۔

اسرائیل نے گذشتہ سوموار کو غزہ میں کرونا وائرس کی ویکسین کی منتقلی معطل کردی تھی حالانکہ اس نے پہلے خود غزہ میں ویکسین بھیجنے کا اعلان کیا تھا۔