.

ایک لاکھ سکّے جمع کرنے والا سعودی شہری گینز بک آف ریکارڈز میں شامل ہونے کا خواہش مند

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں ایک شہری نے سکوں کو جمع کرنے کے لیے 20 برس سے زیادہ محنت کی۔ اس دوران میں وہ دنیا کے مختلف ممالک میں گیا تا کہ ان سکوں کو جمع کر سکے۔ بات صرف سکے جمع کرنے تک محدود نہیں رہی بلکہ اس شہری نے سکوں کے ذریعے سعودی بادشاہوں کی تصاویر پر مشتمل حیران کن فن پارے تیار کر ڈالے۔

سعودی شہری ہشام النجار نے دنیا بھر میں نوادرات اور نایاب کرنسیوں کے نیلاموں سے ایک لاکھ سے زیادہ سکے جمع کیے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے گفتگو میں النجار نے واضح کیا کہ سکوں کے ذریعے فن پاروں کی تیاری کا مقصد ان سکوں کو خوب صورت شکل میں محفظ کرنا ہے۔ اس واسطے ایسے فن پارے تیار کیے گئے جو دیکھنے والوں کے لیے پُر کشش ہوں۔

النجار کے مطابق اس نے شاہ سلمان کی تصویر دنیا بھر کے 9 ہزار سے زیادہ سکوں کے ذریعے تیار کی۔ النجار نے مزید بتایا کہ اس کے پاس سکوں سے تیار کی گئیں 40 تصاویر ہیں۔ یہ تصاویر سعودی عرب کے فرمارواؤں اور شہزادوں اور خلیجی ممالک کے شہزادوں کی ہیں۔

النجار نے اپنی گفتگو کے اختتام پر انکشاف کیا کہ اس آرٹ ورک کے ذریعے وہ دنیا بھر میں سکوں کے ذریعے بنائی گئی سب سے بڑی دیوار نقاشی پیش کرنا چاہتا ہے۔ یہ فن پارہ مکہ مکرمہ یا جدہ یا ریاض یا کسی بھی اور شہر میں ہو سکتا ہے اور النجار اس کے ذریعے گینز بک آف ریکارڈز میں شامل ہونے کا خواہش مند ہے۔