.

عراق اورسعودی عرب کے درمیان ڈیڑھ سال سے زیادہ عرصہ کے بعد براہ راست پروازیں بحال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراق کی وزارتِ نقل و حمل نے سعودی عرب کے ساتھ قومی فضائی کمپنی (عراقی ایئرویز) کی براہِ راست پروازیں دوبارہ چلانے کا اعلان کیا ہے۔

ٹرانسپورٹ وزارت نے جمعرات کو ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’ہماری قومی فضائی کمپنی نےبھرپورکوششوں کے بعد کروناوائرس کی وبا کی وجہ سے گذشتہ قریباً دوسال کی معطلی کے بعدعراق کے ہوائی اڈوں سے سعودی عرب کے ہوائی اڈوں کے لیے اپنی براہِ راست پروازیں دوبارہ شروع کر دی ہیں۔‘‘

عراق نے مارچ 2020ء میں کووِڈ-19 کی وبا کے عروج کے دنوں میں اپنے ہوائی اڈوں پرتمام پروازوں کی آمدورفت معطل کردی تھی اور سعودی عرب نے بھی اسی ماہ عراق کے لیے اپنی پروازیں معطل کردی تھیں اور سفری پابندی عاید کردی تھی۔

عراق کی وزارت ٹرانسپورٹ نے مزید کہا ہے:’’حج اور عمرہ اتھارٹی اور سعودی حکام کے ساتھ اعلیٰ سطح کی ہم آہنگی کے بعد پروازیں بحال کی جارہی ہیں تاکہ دونوں ممالک کی وضع کردہ ہدایات کے مطابق عراقی عمرہ زائرین کی نقل وحمل میں آسانی پیدا کی جاسکے۔‘‘