یمن اور حوثی

حوثیوں نے صنعا ہوائی اڈے کے لیے ’یو این‘ اور امدادی طیاروں کے اجازت نامے معطل کر دیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

کل سوموار کے روز العربیہ کے ذرائع نے اطلاع دی ہے کہ حوثی ملیشیا نے صنعا کے ہوائی اڈے پر اقوام متحدہ اور امدادی طیاروں کے لیے پرواز کے اجازت نامے معطل کر دیے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ حوثیوں نے صنعا کے ہوائی اڈے پر اقوام متحدہ کی پرواز کو لینڈ کرنے کی اجازت دینے سے انکار کر دیا ہے۔

ذرائع نے اشارہ کیا کہ صنعا کے ہوائی اڈے کے حوثیوں کے فوجی استعمال نے اقوام متحدہ کی پروازوں کو منفی طور پر متاثر کیا۔

یمن میں آئینی حکومت کی حمایت کرنے والے عرب اتحاد نے تصدیق کی تھی کہ صنعا ایئرپورٹ پاسداران انقلاب اور حزب اللہ کے ماہرین کے لیے فوجی اڈہ بن گیا ہے۔ انہوں نے نشاندہی کی کہ ملیشیا سرحد پار سے حملے کرنے کے لیے قانونی استثنیٰ والی جگہوں کا استعمال کرتی ہے۔ انہوں نے اعلان کیا کہ اگر شہریوں کے تحفظ کے لیے ضروری ہوا تو وہ استثنیٰ سے دستبردار ہونے کے لیے قانونی کارروائی کریں گے۔

عرب اتحاد نے اشارہ کیا کہ صنعاء کے ہوائی اڈے سے منسلک الدیلمی اڈے پر مخصوص اہداف کے لیے کشش ثقل کے مراکز کو نشانہ بنایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے الدیلمی اڈے پر ڈرونز کو اسمبل کرنے اور بہتر بنانے کی سہولیات کو تباہ کر دیا۔ ہم نے صنعاء کے ہوائی اڈے سے منسلک زیر زمین بیلسٹک میزائل لانچروں کو بھی تباہ کر دیا۔

عرب اتحاد نے اس سے قبل صنعاء میں جائز فوجی اہداف پر فضائی حملوں کا بھی اعلان کیا تھا۔

انہوں نے نشاندہی کی کہ یہ حملے خطرے کے فوری ردعمل اور صنعا کے ہوائی اڈے سے ڈرون لانچنگ کو روکنے کے لیے کیے گئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں