سعودی عرب میں فوڈ پروڈکٹس میں مینڈک کے’لوگو‘ کی حقیقت کیا ہے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کی فوڈ اینڈ ڈرگ اتھارٹی نے کہا ہے کہ کچھ مصنوعات پرمینڈک کے ’لوگو‘ کی موجودگی اس بات کی نشاندہی کرتی ہے کہ پروڈکشن ایسوسی ایشن جو پائیدار پیداوار اور ماحولیات سے متعلق ہیں جو بین الاقوامی معیارات اور اصولوں پر عمل کرتی ہے

فوڈ اتھارٹی کا کہنا ہے کہ "یہ نشان یہ بھی بتاتا ہے کہ مینوفیکچرر کو سخت سرٹیفیکیشنز اور معیارات کی طرف سے سخت جانچ پڑتال کا نشانہ بنایا گیا ہے اور مینڈک کا پروڈکٹ کے اجزاء سے کوئی تعلق نہیں ہے"۔

سعودی حکام نے سوشل میڈیا پرگردش کرنے والی ایک ویڈیو کلپ کا جواب دیا ہے۔ اس ویڈیو میں مینڈک کے لوگو والی مصنوعات کھانے کے خلاف انتباہ کیا گیا ہے۔

مینڈک کا لوگو امریکا، کینیڈا اور یورپی ممالک میں چاکلیٹ، کافی، چائے اور پھلوں کی کچھ مصنوعات میں وسیع پیمانے پر پایا جاتا ہے اور یہ اس بات کی علامت ہے کہ یہ مصنوعات اگائی گئی تھیں یا اس میں مصدقہ اور ماحول دوست فارموں کا مواد استعمال کیا گیا تھا۔

یہ لوگو"رین فارسٹ الائنس" کے نام سے مشہور ایک تنظیم کی طرف سے دیا گیا ہے جو کہ 70 ممالک میں کام کرنے والی ایک بین الاقوامی غیر سرکاری تنظیم ہے اور اس کی بنیاد مشہور امریکی ماحولیاتی کارکن ڈینیئل کاٹز نے 1987 میں رکھی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں