340 بسوں کے ساتھ "حافلات الریاض‘‘ سروس کے پہلے مرحلے کا آغاز

سفر کے لیے چار ریال میں دستیاب ٹکٹ خریداری کے دو گھنٹے بعد تک کار آمد ہوگی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب میں ریاض شہر کے شاہی کمیشن نے ریاض میں کنگ عبدالعزیز پبلک ٹرانسپورٹ پروجیکٹ کے ایک حصے کے طور پر سفری سہولت "حافلات الریاض" کے پہلے مرحلے کے آغاز کا اعلان کردیا۔ اس پہلے مرحلے میں 340 بسیں چلیں گی اور یہ شہر کے 633 مقامات پر سٹاپ کریں گی۔ ’’حافلات الریاض‘‘ بس سروس کے اس مرحلے پر بسیں 15 شاہراہوں پر چلیں گی۔ پروگرام میں مجموعی طور پر 86 شاہراہوں کو شامل کیا جائے گا۔

شاہی کمیشن نے کہا کہ "حافلات الریاض" پروجیکٹ کے پہلے مرحلے کا آغاز ایک سٹریٹجک پروجیکٹ کے طور پر کیا گیا ہے۔ اس پروجیکٹ کا مقصد شہر کی نقل و حرکت کی ضروریات کو پورا کرنا، پبلک ٹرانسپورٹ کے شعبے میں ایک بڑی چھلانگ لگانا، مختلف علاقوں کے باہمی رابطے کو مضبوط بنانا ہے، دارالحکومت کے رہائشیوں اور زائرین کے معیار زندگی کو بلند کرنا ہے۔ اس پروجیکٹ کو بتدریج تکمیل تک پہنچایا جائے گا۔

ایس پی اے کے مطابق الریاض شاہی کمیشن کے بیان میں مزید کہا گیا کہ ’’ حافلات الریاض‘‘نیٹ ورک کے تحت جن سڑکوں پر بسیں چلائی جائیں گی، ان سڑکوں کی لمبائی 1900 کلومیٹر ہے۔ پروجیکٹ پانچ مراحل میں مکمل کیا جائے گا اور اس میں بسوں کی کل تعداد 800 سے تجاوز کر جائے گی۔ سٹیٹنوں کی تعداد 2900 سے زیادہ اور ٹریکس کی تعداد 86 ہوجائے گی۔

"حافلات الریاض" سروس کام کی مقامات، تعلیم اور تفریحی سرگرمیوں تک پہنچنے کے لیے بسوں کو ایک ذریعہ کے طور پر استعمال کرتے ہوئے معاشرے کے تمام طبقات کے لیے نقل و حرکت میں سہولت فراہم کرنے میں مدد کرے گی۔ پبلک ٹرانسپورٹ کے اس منصوبے سے نجی کار کے استعمال اور ٹریفک کے بہاؤ میں کمی آئے گی۔

بیان میں واضح کیا گیا ہے کہ اس سروس کے لیے ایک الیکٹرانک پورٹل بھی شروع کردیا گیا ہے اس ویب سائٹ سے مسافروں کو روٹس اور ٹکٹوں کی خریداری کے طریقہ کار کو جاننے میں مدد ملے گی۔ اس حوالے سے موبائل فون ایپ بھی لانچ کردی گئی ہے۔

"حافلات الریاض" سروس کی ٹکٹ کی قیمت 4 ریال ہے جو کسی ایک بس کے پہلے لانگ ان کے بعد دو گھنٹے تک کارآمد ہے۔ اس ٹکٹ کو دوسری بس میں منتقل کرنا ممکن ہے۔

خیال رہے کہ ریاض میں کنگ عبدالعزیز پبلک ٹرانسپورٹ پروجیکٹ میں ٹرینوں اور بسوں کے ایک مربوط نیٹ ورک کا نفاذ شامل ہے۔ یہ ریاض شہر میں نقل و حرکت کی موجودہ اور متوقع مستقبل کی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے کام کرتا اور ایک جدید اور محفوظ ٹرانسپورٹیشن سروس فراہم کرتا ہے۔

واضح رہے "ریاض میٹرو" نیٹ ورک شہر میں پبلک ٹرانسپورٹ نیٹ ورک کی ریڑھ کی ہڈی کی نمائندگی کرتا ہے۔ یہ 6 ٹریکس پر مشتمل ہے جس کی کل لمبائی 176 کلومیٹر ہے۔ اس میں 85 سٹیشن شامل ہیں۔ کنگ عبدالعزیز پراجیکٹ میں پبلک ٹرانسپورٹ کے لیے ٹرین اور بسوں کے نیٹ ورک کو کئی مراحل میں مکمل کیا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں