سعودی عرب میں ’’ ثقافتی ہنر‘‘مقابلہ، امیرتبوک نے اداکارہ ’ اسینات‘‘کو اپنی تسبیح دیدی

اپنی نوعیت کے اس منفرد مقابلہ میں تعلیم و ثقافت کی وزارتوں نے 54 مرد و خواتین کو اعزازات سے نوازا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں میں اپنی نوعیت کا منفرد ’’ ثقافتی ہنر‘‘ مقابلے کا انعقاد کیا گیا۔ اس مقابلہ میں امیر تبوک نے اداکارہ ’’ اسینات‘‘کو اپنی تسبیح دے کر توجہ حاصل کرلی۔ تبوک ریجن کے گورنر شہزادہ فہد بن سلطان بن عبدالعزیز نے انٹرمیڈیٹ طلبہ کے درمیان تھیٹر کے میدان میں ’’ثقافتی ہنر‘‘ مقابلہ میں پہلی پوزیشن حاصل کرنے والی اسینات عبدالسلام الصباح کو اپنی "تسیح " بھی تحفہ میں دے دی۔

مقابلہ کا اہتمام حال ہی میں وزارت ثقافت نے یونیورسٹی کے مرد اور خواتین طلبہ کی گریجویشن تقریب میں کیا تھا۔ مقابلہ میں گورنر تبوب عزت ماب فہد بن سلطان کو مدعو کیا گیا تھا۔

اسینات نے گورنر کے ہاتھ سے قیمتی تحفے کا اعزاز حاصل کرنے پر خوشی کا اظہار کیا۔ انہوں نے خطے میں موجود تمام فنکاروں کی سرپرستی کرنے اور ان کا خیال رکھنے پر گورنر تبوک کا خصوصی شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا یہ تسبیح میرے لیے ایک قیمتی یاد ہے اور میں اس گراں قدر تحفے کو کبھی بھلا نہیں سکوں گی۔

واضح رہے یہ مقابلہ سعودی عرب میں اپنی نوعیت کا پہلا مقابلہ ہے جہاں وزارت تعلیم و ثقافت نے 54 مرد اور خواتین طلبہ کو اعزازات سے نوازا۔ یہ وہ طلبہ تھے جنہوں نے "ثقافتی ہنر" مقابلے میں کامیابی حاصل کی تھی۔ ان نوجوان فنکاروں کو پچاس لاکھ سعودی ریال کے انعامات پیش کیے گئے۔

اس مقابلہ میں وزیر تعلیم یوسف البنیان اور وزیر ثقافت شہزادہ بدر الفرحان کی سرپرستی میں فنکار ناصر القصبی اور گلوکار عبادی الجوھر بھی شریک تھے۔ اس غیر معمولی تقریب میں ثقافتی اور تعلیمی نظام کے متعدد اعلیٰ حکام، معززین، اور جیتنے والے طلبہ کے والدین بھی شریک تھے۔

سعودی عرب میں سکولوں کی سطح پر اس مقابلے کے پہلے ایڈیشن میں بھی بڑی تعداد میں طلبہ نے شرکت کی۔ شرکا کی تعداد تین تعلیمی سطحوں ابتدائی، انٹرمیڈیٹ اور سیکنڈری کے 247 ہزار طلبہ تک پہنچ گئی تھی۔ 108 طلبہ نے تربیتی کیمپ تک رسائی حاصل کی اور ان میں سے 54 طلبہ انعامات حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں