سعودی عرب اور روس کا غزہ اور اس کے اطراف میں ہونے والی پیش رفت پر تبادلہ خیال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان بن عبداللہ نے اپنے روسی ہم منصب سرگئی لاوروف کے ساتھ غزہ کی پٹی اور اس کے اطراف میں ہونے والی تازہ ترین خطرناک پیش رفت پر تبادلہ خیال کیا ہے۔

شہزادہ فیصل بن فرحان نے منگل کے روز ٹیلیفون پر پر روسی وزیر خارجہ سے بات کرتے ہوئے اقوام متحدہ کی جانب سے گذشتہ جمعہ کو جاری کردہ قرارداد کے لیے روس کی حمایت ان کا شکریہ ادا کیا۔

خبر رساں ادارے ’ایس پی اے‘ کے مطابق عرب ممالک می طرف سے جنرل اسمبلی میں پیش کی گئی قرارداد کا مقصد محصور غزہ کی پٹی میں فوری جنگ بندی اور فوری انسانی بنیادوں پر جنگ بندی کے قیام کا مطالبہ کیا گیا تھا۔

دونوں وزرائے خارجہ نے شہریوں کے مکمل تحفظ کے لیے فوری جنگ بندی کے حصول کے لیے بین الاقوامی برادری کے کردار کی اہمیت پر بھی تبادلہ خیال کیا۔

انہوں مسئلہ فلسطین کے منصفانہ اور جامع حل تلاش کرنے اور فلسطینی قوم کی امنگوں کے مطابق آزاد فلسطینی ریاست کے قیام پر زور دیا۔

قابل ذکر ہے کہ گذشتہ جمعے کے بعد سے اسرائیل نے غزہ میں اپنی زمینی کارروائیوں کو مزید تیز کر دیا ہے۔

غزہ میں محکمہ صحت کے حکام نے کہا ہے کہ اسرائیلی بمباری سے اب تک 8,525 فلسطینی شہید ہو چکے ہیں، ان میں سے زیادہ تر عام شہری ہیں، جن میں 3,542 بچے بھی شامل ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں