فلسطین اسرائیل تنازع

غزہ پر راتوں رات اسرائیلی حملوں میں 200 سے زائد افراد ہلاک: وزارتِ صحت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

محصور فلسطینی علاقے کی وزارتِ صحت نے پیر کو بتایا کہ غزہ کی پٹی میں راتوں رات شدید اسرائیلی حملوں میں 200 سے زائد افراد جاں بحق ہو گئے۔

وزارت نے ایک بیان میں کہا، "راتوں رات قتلِ عام میں 200 سے زیادہ افراد کے جاں بحق ہونے کی اطلاع ملی۔" بیان میں مزید کہا گیا کہ ہلاک شدگان کی تعداد صرف غزہ شہر اور غزہ کی پٹی کے شمالی حصے پر محیط تھی۔"

اسرائیل نے پیر کے روز غزہ پر "اہم" حملوں کے ساتھ گولہ باری شروع کی جب فوجیوں نے علاقے میں حماس کی افواج سے لڑائی کی۔ اس دوران اقوامِ متحدہ کی امدادی ایجنسیوں کی طرف سے جنگ بندی کے مطالبات کو نظر انداز کر دیا گیا جنہوں نے ایک ماہ سے جاری لڑائی میں شہریوں کی بڑھتی ہوئی ہلاکتوں کی مذمت کی تھی۔

7 اکتوبر کو حماس کے حملوں میں اسرائیلی حکام کے مطابق 1,400 افراد ہلاک ہوئے اور 240 سے زیادہ افراد کو یرغمال بنا لیا گیا جس کے فوجی ردِعمل کے ایک حصے کے طور پر اسرائیلی افواج نے غزہ میں اپنی زمینی کارروائی کو تیز کر دیا ہے۔

اسرائیل نے اس کے بعد سے غزہ کی پٹی پر مسلسل بمباری کی ہے اور بری فوج بھیجی ہے جس میں فلسطینی وزارتِ صحت کے مطابق 9,770 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔ ان میں تقریباً دو تہائی خواتین اور بچے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں