فلسطین اسرائیل تنازع

ممکنہ معاہدہ، اسرائیل اور حماس کے درمیان 50 قیدیوں کے تبادلے کا امکان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

العربیہ اور الحدث ذرائع نے جمعہ کے روز اطلاع دی ہے کہ جلد ہی حماس اور اسرائیل کے درمیان جنگ بندی کا معاہدہ طے پا جائے گا، جس میں امداد کی داخلے اور حماس کے زیر حراست 50 قیدیوں کی رہائی شامل ہے۔

ہمارے ذرائع نے اطلاع دی ہے کہ اسرائیل اور حماس کے درمیان 50 خواتین اور بچوں کے لیے 50 کی اسرائیلی قیدیوں کا معاہدہ ہونے والا ہے۔

تفصیلات کے مطابق العربیہ اور الحدث ذرائع نے تصدیق کی ہے کہ انسانی بنیادوں پر جنگ بندی اور مزید امداد کے داخلے کا معاہدہ جلد طے پا جائے گا، جس کے بدلے میں حماس 50 اسرائیلی سول یرغمالیوں اور بچوں کو رہا کرے گی جب کہ اسرائیل 50 قید خواتین اور بچوں کو رہا کرے گا۔

العربیہ اور الحدث ذرائع نے مزید کہا کہ غزہ میں ہونے والے معاہدے میں 3 روزہ جنگ بندی شامل ہے۔ اسرائیل نے معاہدے کے ایک حصے کے طور پر اقوام متحدہ کی نگرانی میں غزہ کی پٹی میں محدود مقدار میں ایندھن کے داخلے پر بھی رضامندی ظاہر کی ہے۔

ذرائع نے مزید کہا کہ اس معاہدے کو قبول کرنے کے لیے اسرائیل پر امریکی دباؤ ہے۔

جمعہ کو غزہ میں اسرائیل اور مسلح فلسطینی دھڑوں کے درمیان جنگ اپنے 42 ویں دن میں جاری ہے جب کہ غزہ کی پٹی میں تمام ضروریات زندگی کے ختم ہوچکی ہیں جبکہ جنگ بندی کے کوئی آثار نظر نہیں آتے۔

حماس کے حیرت انگیز حملے کے جواب میں ہفتوں سے جاری اسرائیلی فوجی مہم کا خمیازہ فلسطینی شہری برداشت کر رہے ہیں۔

غزہ میں صحت کے حکام کا کہنا ہے کہ اسرائیلی بمباری اور زمینی حملے میں کم از کم 11,500 افراد کی شہات کی تصدیق ہوچکی ہے، جن میں سے 4700 سے زائد بچے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں