رمضان 2024: متوقع آغاز کی تاریخ، روزے کے طویل ترین اور مختصر ترین اوقات، تعطیلات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

دنیا بھر کے مسلمان جلد ہی رمضان کے مقدس مہینے کے لیے تیاریاں شروع کر دیں گے کیونکہ اس کے متوقع آغاز کی تاریخ آنے میں دو ماہ سے بھی کم وقت رہ گیا ہے۔

رمضان المبارک کے دوران دنیا بھر کے مسلمان فجر سے غروبِ آفتاب تک روزہ رکھتے ہیں اور اس دوران کھانے پینے سے پرہیز کرتے ہیں۔ لوگ عام طور پر افطاری کے ساتھ افطار کرتے ہیں جس میں اخوت کے احساس پر زور دیا جاتا ہے اور کم مراعات یافتہ لوگوں کے ساتھ ہمدردی کی جاتی ہے۔

رمضان 2024 ممکنہ طور پر 11 مارچ یا اس کے قریب شروع ہوگا اور مختلف ممالک میں روزے کے اوقات مختلف ہوں گے۔ اس سال کی حد 12 اور 17 گھنٹوں کے درمیان ہونے کی امید ہے۔

روزے کے طویل ترین اوقات والے مقامات (15 اور 18 گھنٹے کے درمیان)

نیوک، گرین لینڈ

ریکجاوک، آئس لینڈ

ہیلسنکی، فن لینڈ

گلاسگو، سکاٹ لینڈ

اوٹاوا، کینیڈا

لندن، برطانیہ

پیرس، فرانس

زیورخ، سوئٹزرلینڈ

روم، اٹلی

میڈرڈ، سپین

روزے کے مختصر اوقات والے مقامات (12 سے 14 گھنٹے کے درمیان)

کرائسٹ چرچ، نیوزی لینڈ

پورٹو مونٹ، چلی

جکارتہ، انڈونیشیا

نیروبی، کینیا

کراچی، پاکستان

نئی دہلی، بھارت

شرقِ اوسط اور خلیجی علاقے

خلیجی خطہ اور شرقِ اوسط مثلاً سعودی عرب اور مصر میں روزے کے اوقات کی حد ممکنہ طور پر مقام کے لحاظ سے 13 سے 15 گھنٹے کے درمیان ہوگی۔

سردیوں میں رمضان

اس سال رمضان 2024 کا آغاز سردیوں کے موسم میں ہوگا۔ ایمریٹس آسٹرونومی سوسائٹی کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے چیئرمین ابراہیم الجروان کے مطابق سردیوں کا موسم 22 دسمبر سے شروع ہوا اور یہ 20 مارچ تک جاری رہے گا۔

مقدس مہینے کے اختتام کی علامت یعنی عید الفطر 10 اپریل کو یا اس کے قریب ہونے کی توقع ہے۔ مسلم اکثریتی ممالک میں سرکاری اور نجی شعبے کے ملازمین کو چھٹی منانے کے لیے کئی دنوں کی چھٹیوں سے لطف اندوز ہونے کا موقع ملے گا۔

البتہ سعودی عرب میں رویتِ ہلال کمیٹی روایتی طور پر رمضان المبارک اور عید الفطر کی تاریخ کے قریب ہونے کی تصدیق کرتی ہے۔

سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات میں عام تعطیلات

اگرچہ رمضان کو عام تعطیل کے طور پر نہیں منایا جاتا لیکن مسلمان مقدس مہینے کے اختتام پر عید الفطر مناتے ہیں۔

گذشتہ سال سعودی عرب نے نجی اور غیر منافع بخش شعبوں کے لیے مسلم تعطیل کے موقع پر چار روزہ عام تعطیل کا اعلان کیا تھا جبکہ متحدہ عرب امارات کے رہائشیوں نے کام سے پانچ دن کی چھٹی کا لطف اٹھایا تھا۔

مسلم ممالک میں رہنے والے اس سال اتنی ہی چھٹیوں کی توقع کر سکتے ہیں جن کا اعلان تاریخ کے قریب کیا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں