سعودی عرب میں تھری ڈی پرنٹنگ ٹیکنالوجی سے تیار گئی دنیا کی پہلی مسجد کا افتتاح

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

’تھری ڈی پرنٹنگ ٹیکنالوجی‘ کا استعمال کرتے ہوئے بنائی گئی دنیا کی پہلی مسجد کا افتتاح بدھ کو سعودی عرب کے شہر جدہ شہرمیں کیا گیا۔ جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے تیار کی گئی مرحوم عبدالعزیز عبداللہ شربتلی مسجد جدہ گورنری میں الجوہرہ پروجیکٹ کا حصہ ہے۔ یہ پروجیکٹ نیشنل ہاؤسنگ کمپنی کے منصوبوں میں سے ایک ہے۔ مسجد کے افتتاح کے موقعے پرسرکاری حکام ، تاجروں اور عام شہریوں کی بڑی تعداد موجود تھی۔

نئی مسجد کی تعمیر کاروباری خاتون جنات محمد عبدالوحید کی طرف سے اپنے مرحوم شوہرکو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے تیار کرائی۔ مسجد 5600 مربع میٹر کے رقبے پر محیط ہے۔ اس کی تیاری پر لگ بھگ چھ ماہ لگے۔ مسجد کو چین کی گوانلی کمپنی نے تھری ڈی پرنٹنگ ٹیکنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے تیار کیا گیا۔

وجانت عبدالوحید نے کہا کہ وہ اس جدید ٹیکنالوجی کو مملکت میں متعارف کرانے میں اپنا حصہ ڈالنا چاہتی ہیں۔ اس مسجد کی تعمیر کے بعد یہ دنیا کی اپنی نوعیت کی پہلی مسجد اور سعودی عرب ایسی مساجد بنانے والا پہلا ملک بن گیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہ ٹیکنالوجی اور جدید تعمیرات کی دنیا میں ایک معیاری جست کی نمائندگی کرتی ہے۔ یہ مسجد سعودی عرب میں تعمیرات کے میدان میں جدید ٹیکنالوجی کواپنانے کا ثبوت ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں