ایران کااسرائیل پرحملہ:جوابی حملے کے دوران لبنان، اردن، عراق نے فضائی حدود بند کر دیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

شرقِ اوسط کے کئی ممالک نے ہفتے کے روز تادیر اعلان کیا کہ وہ اسرائیل پر ایرانی حملے کے جواب میں اپنی فضائی حدود بند کر رہے ہیں اور پروازوں کا رخ موڑ رہے ہیں۔

ایران کے پاسدارانِ انقلاب نے تصدیق کی ہے کہ یکم اپریل کو اس کے دمشق قونصل خانے پر ہونے والے ہلاکت خیز ڈرون حملے کے بدلے میں اسرائیل کے خلاف ڈرون اور میزائل حملہ کیا جا رہا ہے۔

اسرائیل

جب فوج کی جانب سے یہ اطلاع دی گئی کہ ایران نے براہِ راست اپنی سرزمین سے اسرائیل پر ڈرون حملے کیے تو اسرائیل کے ہوائی اڈے کی اتھارٹی نے کہا کہ اس کی فضائی حدود اتوار کی رات 12:30 بجے سے بند کر دی جائیں گی۔

بیان میں کہا گیا ہے، "سیکیورٹی سسٹم کی رہنمائی کے مطابق رات 12:30 بجے سے اسرائیل کی ریاست کی فضائی حدود بین الاقوامی اور ملکی پروازوں کے لیے بند کر دی جائیں گی۔"

اردن

المملکہ نے ہوا بازی کے حکام کا حوالہ دیتے ہوئے رپورٹ کیا کہ مملکتِ ہاشمیہ نے تمام آنے والے، روانہ ہونے والے اور ٹرانزٹ طیاروں کے لیے اپنی فضائی حدود کو عارضی طور پر بند کرنے کا اعلان کیا ہے۔ نیز کہا کہ صورتِ حال کو "پیش رفت کے مطابق مسلسل اپ ڈیٹ کیا اور اس کا جائزہ لیا جائے گا۔"

اردن کے سول ایوی ایشن ریگولیٹری کمیشن کے چیئرمین ہیثم میستو نے المملکہ پر کہا کہ اردن کے فضائی ٹریفک میں مداخلت نے اردن کے جی پی ایس سسٹم کو متاثر کیا جس سے علاقے میں طیارے متبادل نیویگیشن سسٹم استعمال کرنے پر مجبور ہو گئے۔

لبنان

عوامی تعمیرات کے وزیر علی حامی نے کہا کہ احتیاطی اقدام کے طور پر لبنان کی فضائی حدود مقامی وقت کے مطابق رات ایک بجے سے صبح سات بجے تک عارضی طور پر بند کر دی جائیں گی۔

حامی نے ایکس پر ایک بیان میں کہا، "اس لیے بیروت رفیق حریری بین الاقوامی ہوائی اڈے پر فضائی نیویگیشن اس مدت کے دوران مکمل طور پر بند کر دی گئی ہے بشرطیکہ پیش رفت کے مطابق اسے اپ ڈیٹ کیا اور جائزہ لیا جائے گا۔"

عراق

عراق نے ہفتے کے روز تادیر اعلان کیا کہ وہ اپنی فضائی حدود بند کر رہا تھا اور ہمسایہ ملک ایران کی طرف سے اسرائیل پر ڈرون حملے کے بعد تمام فضائی ٹریفک معطل کر رہا تھا۔

وزیر ٹرانسپورٹ رزاق السعدوی نے سرکاری خبر رساں ایجنسی آئی این اے کو بتایا کہ "عراق کی فضائی حدود بند کر دی گئی ہیں اور ہوائی ٹریفک کو روک دیا گیا ہے۔" سول ایوی ایشن اتھارٹی نے کہا کہ یہ بندش رات 11:30 بجے (2030 جی ایم ٹی) سے صبح 5:30 بجے تک رہے گی۔

کویت

کویت ایئرویز نے اتوار کے اوائل میں کہا ہے کہ اس نے خطے میں سکیورٹی کی صورتِ حال اور اپنے مسافروں کی حفاظت کے لیے تشویش کے پیشِ نظر تمام آنے اور جانے والی پروازوں کو "کشیدگی کے علاقوں" سے ہٹانے کا فیصلہ کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں