سعودی ہوائی اڈوں پر مسافروں کی تعداد میں 26 فیصد اضافہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی جنرل اتھارٹی برائے شماریات نے مملکت میں سال 2023ء کے لیے ایئر ٹرانسپورٹ کے اعداد و شمار کے بلیٹن کے نتائج جاری کئے ہیں۔ نتائج سے ظاہر ہوتا ہے کہ مملکت کے ہوائی اڈوں پر مسافروں کی تعداد تقریباً 112 ملین تک پہنچ گئی۔ یہ تعداد سال 2022ء کے مقابلے میں 26 فی صد زیادہ ہے۔ مملکت کے ہوائی اڈوں پر بین الاقوامی پروازوں کے ذریعےسفر کرنے والے مسافروں کی تعداد 61 ملین تک پہنچ گئی جو سال 2022ء کے مقابلے میں 46 فی صد زیادہ ہے۔ مملکت کے ہوائی اڈوں پر اندرون ملک پروازوں کے ذریعے سفرکرنے والے مسافروں کی تعداد 51 ملین تک پہنچ گئی جو کہ گذشتہ سے پیوسہ برس کے تناسب سے نو فی صد زیادہ ہے۔

بلیٹن کے نتائج سے پتہ چلتا ہے کہ مملکت کے ہوائی اڈوں پر اندرون ملک پروازوں کی تعداد چار لاکھ 21 ہزار تک پہنچ گئی ہے، جس میں سال 2022ء کے مقابلے میں 2 فیصد اضافہ ہوا ہے، جبکہ مملکت کے ہوائی اڈوں پر بین الاقوامی پروازوں کی تعداد تقریباً تین لاکھ 94 ہزار پروازوں تک پہنچ گئی جو اس سے پچھلے سال کی نسبت 36 فی صد زیادہ ہے۔

بین الاقوامی فضائی ربط کا تناسب

رپورٹ سے پتا چلتا ہے کہ مملکت نے گذشتہ برس بین الاقوامی فضائی رابطوں کی شرح میں 9 مقامات کا کیا جو مملکت کو سال 2019ءکے مقابلے میں 18 ویں نمبر پر لے آیا، کیونکہ مملکت کے تمام ہوائی اڈوں سے پہنچنے والے ممالک کی کل تعداد2023ء میں 86 ممالک تک پہنچ گئی۔ یہ تعداد 2022ء کے مقابلے میں 12 فیصد زیادہ۔ ہے۔ 2022ء میں ان ممالک کی تعداد 148تھی۔

بلیٹن کے نتائج میں بتایا گیا ہے کہ مملکت کے تمام ہوائی اڈوں میں سال 2023 ء کے لیے کل گنجائش 116 ملین سالانہ مسافروں تک پہنچ گئی ہے۔ کنگ عبدالعزیز انٹرنیشنل ایئرپورٹ 45 ملین سالانہ مسافروں کی شرح کے ساتھ سب سے آگے ہے۔ اس کے بعد کنگ خالد بین الاقوامی ہوائی اڈہ 37 ملین سالانہ مسافروں کی شرح کے ساتھ دوسرے اور شاہ فہد انٹرنیشنل ایئرپورٹ 13 ملین مسافروں کے ساتھ تیسرےنمبر پر رہا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں