آئرلینڈ کا فلسطینی ریاست کو تسلیم کرنے کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

آئرش حکومت بدھ کو فلسطینی ریاست کو تسلیم کرنے کا اعلان کرنے والی ہے جس کی اسرائیل نے سخت مخالفت کی ہے۔ یہ بات اس معاملے سے واقف ایک ذریعے نے بتائی۔

یورپی یونین کے ارکان آئرلینڈ، سپین، سلووینیا اور مالٹا نے حالیہ ہفتوں میں اشارہ دیا ہے کہ وہ ممکنہ طور پر ایک مربوط اور مشترکہ اعلان میں فلسطین کو تسلیم کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔ ان ممالک کا استدلال ہے کہ خطے میں دیرپا امن کے لیے دو ریاستی حل ضروری ہے۔

یہ کوششیں ایسے وقت میں سامنے آئی ہیں جب غزہ میں حماس کو شکست دینے کے لیے اسرائیل کی جارحیت کی وجہ سے ہلاکتوں کی تعداد میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے اور یہ عالمی سطح پر جنگ بندی اور خطے میں قیامِ امن کے لیے ایک دیرپا حل پر زور دینے کا سبب بنا ہے۔

1988 سے اقوامِ متحدہ کے 193 رکن ممالک میں سے 139 نے فلسطینی ریاست کو تسلیم کیا ہوا ہے۔

آئرش حکومت نے کہا ہے کہ تسلیم کرنے کے عمل سے امن کی کوششوں کی تکمیل اور دو ریاستی حل کی حمایت ہو گی۔

اسرائیل کی وزارت خارجہ نے منگل کے روز اس اقدام کے خلاف خبردار کرتے ہوئے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ایکس پر ایک پوسٹ میں کہا کہ تسلیم کرنے کا عمل "مزید دہشت گردی، خطے میں عدم استحکام اور امن کے کسی بھی امکانات کو خطرے میں ڈالنے کا باعث ہو گا۔"

وزارت نے کہا، "حماس کے ہاتھوں میں مہرہ نہ بنیں۔"

آئرش حکومت نے منگل کی شام کہا کہ وزیرِ اعظم اور وزیرِ خارجہ بدھ کی صبح میڈیا سے بات کریں گے لیکن یہ نہیں بتایا کہ موضوع کیا ہو گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں