العربیہ ایکسکلوسیو

سعودی ولی عہد کے وژن کے خطے اور پوری دنیا پر مثبت اثرات مرتب ہوں گے: ولی عہد اردن

’’العربیہ‘‘ نیوز چینل کو ایک خصوصی انٹرویو میں ولی عہد الحسین بن عبداللہ دوم نے اردن اور سعودی عرب کے درمیان گہرے تعلقات پر تبادلۂ خیال کیا۔

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اردن کے ولی عہد الحسین بن عبداللہ دوم کا کہنا ہے کہ سعودی ولی عہد کے مملکت کے لیے مرتب کردہ نظرئیے کے خطے اور پوری دنیا پر مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔

دبئی اور الریاض سے نشریات پیش کرنے والے ’’العربیہ‘‘ نیوز چینل کو ایک خصوصی انٹرویو میں ولی عہد الحسین بن عبداللہ دوم نے اردن اور سعودی عرب کے درمیان گہرے تعلقات پر تبادلۂ خیال کیا۔ اس دوران انہوں نے اپنے ذاتی روابط، باہمی مفادات اور ولی عہد محمد بن سلمان کے زیرِ حکومت مملکت میں انقلابی تبدیلی لانے کے نظرئیے کے بارے میں اپنی بصیرت کا اشتراک کیا۔

شہزادہ الحسین نے محمد بن سلمان کو "برادر اور قریبی دوست" قرار دیا اور مزید کہا کہ دونوں شاہی افراد باقاعدگی سے رابطے میں رہتے ہیں اور ہر چند ماہ بعد ان کی "غیر رسمی" ملاقات ہوتی ہے۔

شہزادہ الحسین نے العربیہ کو بتایا، "میں ان کے واضح نظریئے اور اپنے لوگوں اور ملک کے لیے بہترین خدمات فراہم کرنے کے عزم کی تعریف کرتا ہوں۔" اردن کے شاہی فرد نے سعودی ولی عہد کے مملکت کے لیے مرتب کردہ نظرئیے کی بھی تعریف کی اور کہا کہ اس سے خطے اور پوری دنیا پر مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔ اردنی ولی عہد نے کہا، "شہزادہ محمد بن سلمان کا پرعزم اور جرأت مندانہ وژن پورے خطے پر مثبت اثرات مرتب کرے گا۔ اس کامیابی سے پوری دنیا مستفید ہو گی۔"

سعودی-اردنی تعلقات

خصوصی انٹرویو کے دوران اردنی ولی عہد نے سعودی عرب کے ساتھ "تاریخی" رشتے پر مختصر بات کی اور مستقبل کے تعلقات کے بارے میں اپنی امید کا اظہار کیا۔

انہوں نے کہا، "یہ بالکل تاریخی رشتہ ہے۔ ہمارا ایک مشترکہ مستقبل ہے اور یہ صرف ایک نعرہ نہیں ہے۔"

شہزادہ الحسین کا سعودی عرب سے ذاتی تعلق

اردن کے شہزادے نے شہزادی رجوۃ آل سیف سے شادی کے ذریعے سعودی عرب کے ساتھ اپنے خاندانی تعلقات پر مختصراً بات کی۔

انہوں نے العربیہ کے میزبان طاہر برکہ سے از راہ مذاق کہا، "طاہر، آپ کی معلومات کے لیے بتا دوں کہ آپ اب میرے سسرال کے بارے میں بات کر رہے ہیں۔"

ولی عہد نے گذشتہ سال جون میں ایک شاہی تقریب میں شہزادی رجوۃ سے شادی کی جو سعودی شاہی خاندان سے تعلق رکھنے والی سعودی شہری ہیں۔ جوڑے کے ہاں اس موسمِ گرما کے آخر میں پہلے بچے کی پیدائش متوقع ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں