فلسطینی اتھارٹی غزہ جنگ کے بعد متحدہ فلسطینی قیادت کے لیے تیار ہے :محمد مصطفی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فلسطینی اتھارٹی کے وزیر اعظم محمد مصطفی نے کہا ہے غزہ میں جنگ کے بعد فلسطینی اتھارٹی متحدہ فلسطینی قیادت پر اتفاق کے لیے تیار ہے۔ وہ عراقی دارالحکومت بغداد میں گفتگو کر رہے تھے۔ واضح رہے فلسطینی قیادت 2007 سے باہم منقسم ہے۔ جسے اسرائیل نے اپنے قبضے کو جاری رکھنے کے لیے مفید تر پایا ہے۔

فلسطینی اتھارٹی مغربی کنارے میں ہے اور حماس کی غزہ میں حکومت ہے

وزیر اعظم محمد مصطفی نے بغداد میں عراقی وزیر خارجہ فود حسین کے ہمراہ اپنی پریس کانفرنس کے دوران کہا ہم فلسطینیوں کے طور پر غزہ جنگ کے خاتمے کے بعد کی ذمہ داریاں سنبھالنے کو تیار ہیں۔ ہم فلسطینی عوام کے اتحاد کی بحالی کے لیے بھی تیار ہیں۔

انہوں نے کہا ہمیں فلسطینی ریاست کے قیام کے لیے بھی پوری طرح تیار ہونا چاہیے اور اس سے متعلق ذمہ داریوں کے لیے بھی تیاری کرنی چاہیے۔ ان کی پریس کانفرنس تین یورپی ملکوں سپین، ناروے اور آئر لینڈ کی طرف سے فلسطینی ریاست کو تسلیم کرنے کے اعلان کے بعد سامنے آئی ہے۔

تاہم ابھی فلسطینی اتھارٹی کے بارے میں کہنا مشکل ہے کہ جنگ کے بعد اس کا کردار کیا ہو گا۔ کیونکہ ابھی اسرائیل کی حکومت باہم تقسیم اور غیر واضح ہے۔

اگرچہ امریکہ نے ماہ مارچ میں ہی کہہ دیا تھا کہ بعد از جنگ کے حالات سے پہلے ہی فلسطینی اتھارٹی کو زیادہ فعال اور مضبوط اور شفاف ہونا چاہیے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں