نصیرات کیمپ : اسرائیلی فوج نے حملے میں کئی یرغمالی بھی ہلاک کر دیے: القسام بریگیڈ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

فلسطین مزاحمتی تحریک حماس کے عسکری ونگ القسام بریگیڈ نے نصیرات پر اسرائیلی فوج کے بد ترین حملے کے بارے میں اپنے بیان میں کہا ہے کہ وسطی غزہ میں نصیرات کیمپ سے یرغمالی چھڑانے کی کوشش کے دوران اسرائیلی فوج نے متعدد اسرائیلی یرغمالیوں کو بھی ہلاک کر دیا ہے۔

القسام بریگیڈ کے ترجمان ابو عبیدہ نے ٹیلی گرام چینل پر جاری کیے گئے اپنے ایک بیان میں کہا ہے ' اسرائیلی فوج نے نصیرات میں بہت وسیع پیمانے پر قتل عام کیا ہے۔ اس دوران یہ اپنے چند ایک یرغمالیوں کو چھڑا لے گئی ۔ مگر اسی دوران کئی دوسرے یرغمالیوں کو خود ہی ہلاک بھی کر دیا ہے۔'

واضح رہے اس سے قبل بھی کئی واقعات میں اسرائیلی فوج کے اپنے ہاتھوں اسرائیلی یرغمالیوں کی ہلاکت کے واقعات کی مصدقہ اور غیر مصدقہ اطلاعات سامنے آچکی ہیں۔ تاہم ہفتے کے روز چار یرغمالیوں کو اسرائیلی فوج زندہ چھڑانے میں پہلی بار کامیاب ہوئی ہے۔

سات اکتوبر 2023 کو اسرائیلی فوجیوں اور شہریوں کو اغوا کر کے القسام بریگیڈ کے عسکریت پسندوں نے یر غمال بنایا تھا۔ جن میں سے بعض کو چھڑانے کے لیے اسرائیلی فوج نے آٹھ ماہ کی جنگ کے بعد نویں ماہ کے شروع میں ایک بڑا آپریشن کیا ہے، جس میں ہفتے کے روز 200 سے زائد فلسطینی قتل کیے گئے ہیں۔ اب تک اسرائیل کی غزہ جنگ میں 36800 کے لگ بھگ فلسطینی صرف غزہ میں ہلاک ہوئے ہیں۔

اسرائیلی فوج کے اس وسیع پیمانے پر کیے منظم آپریشن میں تینوں اسرائیلی افواج کے دستے شریک رہے ہیں۔ حماس کے حکام نے اس حملے کو جنگ کے دوران کے چند بد ترین حملوں میں سے ایک قرار دیا ہے۔

تاہم ابھی یہ واضح نہیں ہے کہ اسرائیلی بد ترین بمباری اسی یرغمالی چھڑانے کی اس کوشش کا باقاعدہ حصہ تھی یا آپریشن کے دوران بمباری کی وجہ کچھ اور بنی ہے۔ البتہ یہ اپنی جگہ اہم ہے کہ زمینی فوج ، بحری فوج اور اسرائیلی فضائیہ کی کارروائی ایک ساتھ ہی نصیرات کے علاقے میں چلتی رہی۔

فلسطینی عسکریت پسندوں کے گروپ القسام بریگیڈ کے ترجمان ابو عبیدہ کے بیان کے مطابق اسرائیلی فوج کے اس حملے کے دوران یرغمالیوں کی زندگیوں کو بہت بری طرح نشانہ بننا پڑا ہے۔ اسرائیلی آپریشن کے دوران یرغمالی بھی متعدد ہلاک یا زخمی ہوئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں