.

اسلام آباد :عمران خان کے مکان کی بجلی منقطع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسلام آباد الیکٹرک سپلائی کمپنی (آئیسکو) نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چئیرمین عمران خان کی دارالحکومت کے علاقے بنی گالہ میں واقع محل نما مکان کی بجلی منقطع کردی ہے۔

آئیسکو کا کہنا ہے کہ عمران خان کی قیام گاہ کی بجلی واجبات کی بروقت عدم ادائی کی بنا پر منقطع کی گئی ہے۔ان کی قیام گاہ پر بجلی کی فراہمی کے لیے تین کنکشن لگے ہوئے تھے۔دو مرکزی رہائش اور ایک ٹیوب ویل کے لیے تھا۔

قبل ازیں ستمبر میں وفاقی وزیر پانی وبجلی خواجہ محمد آصف نے ایک نیوزکانفرنس میں کہا تھا کہ عمران خان نے اپنی قیام گاہ کے بل جمع کروا دیے ہیں حالانکہ انھوں نے خود اسلام آباد میں 18 اگست کو دھرنے کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے سول نافرمانی کا اعلان کیا تھا اور اپنے پیروکاروں سے کہا تھا کہ وہ سرکاری واجبات اور محاصل ادا نہ کریں تاکہ حکومت کو مطالبات تسلیم کرنے پر مجبور کیا جاسکے لیکن ان کی سول نافرمانی کی یہ تحریک بری طرح ناکام رہی تھی اور ان کی پارٹی کے عہدے دار تمام سرکاری واجبات ادا کرتے رہے ہیں۔

خواجہ آصف نے نیوز کانفرنس میں بتایا تھا کہ پی ٹی آئی کے چئیرمین نے سترہ ہزار اور تیرہ ہزار مالیت کے دو بل جمع کرادیے ہیں۔تاہم بعد میں عمران خان نے ڈی چوک میں دھرنے کے شرکاء کے سامنے اپنے بجلی کے ایک بل کو نذرآتش کیا تھا اور اپنے مداحوں سے خوب داد سمیٹی تھی اور انھیں بھی ایک طرح سے اس بات کی ترغیب دی تھی کہ وہ بجلی تو ضرور استعمال کریں لیکن اس کے واجبات ادا نہ کریں۔

ان کے اس اقدام کے بعد پانی اور بجلی کے وزیرمملکت عابد شیرعلی نے ایک ٹی وی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ اگر عمران خان نے بجلی کے واجبات ادا نہ کیے تو ان کے میٹر کاٹ دیے جائیں گے اور آج سوموار کو بلوں کی ادائی کے لیے مقررہ وقت گزرنے کے بعد ان کی برقی رو منقطع کردی گئی ہے۔