دہشت گردوں سے فائرنگ کے تبادلے میں پاکستان فوج کے میجر سمیت تین جوان شہید

شمالی وزیرستان کے علاقے میران شاہ میں شدت پسندوں کے ساتھ فائرنگ کے نتیجے میں ایک میجر اور ایک سپاہی جان سے گئے: آئی ایس پی آر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

پاکستان فوج کے محکمہ تعلقات عامہ کے مطابق صوبہ خیبر پختونخوا کے قبائلی ضلع شمالی وزیرستان کے علاقے میران شاہ میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے ایک میجر سمیت دو فوجی اہلکار شہید ہو گئے۔

آئی ایس پی آر کے ایک بیان کے مطابق میران شاہ کے جنرل ایریا میں شدت پسندوں کی موجودگی کی اطلاع پر پاکستان فوج نے ایک آپریشن کیا، جس کے دوران میجر عامر عزیز کی سربراہی میں فوجی دستے نے شدت پسندوں کے ایک گروپ کو روکا اور دونوں اطراف سے فائرنگ کا تبادلہ ہوا۔

بیان میں کہا گیا: ’اس کے نتیجے میں ایک شدت پسند مارا گیا۔‘

آئی ایس پی آر نے بتایا کہ دونوں اطراف سے شدید فائرنگ کے تبادلے کے نتیجے میں سرگودھا سے تعلق رکھنے والے 29 سالہ میجر عامر عزیز اور ساہیوال کے 27 سالہ سپاہی محمد عارف شہید ہو گئے۔

بیان میں مزید کہا گیا کہ علاقے میں مزید شدت پسندوں کے خاتمے کے لیے سرچ آپریشن جاری ہے۔

ادھر آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف جنرل عاصم منیر نے ضلع بنوں کا دورہ کیا جہاں جانی خیل کے علاقے میں گذشتہ روز فوجی قافلے پر خود حملے کے نتیجے میں 9 بہادر جوانوں نے جام شہادت نوش کیا تھا۔

آئی ایس پی آر نے بتایا کہ آج شہید جوانوں کی نماز جنازہ ادا کردی گئی، جس میں فوجی اور سول انتظامیہ کے افسران اور سپاہیوں نے شرکت جبکہ تدفین ان کے آبائی علاقوں میں پورے فوجی اعزاز کے ساتھ ہو گی۔

بیان میں کہا گیا کہ آرمی چیف کو جاری کارروائیوں اور سیکیورٹی کی مجموعی صورت حال پر بریفنگ دی گئی۔

آرمی چیف نے سی ایم ایچ بنوں کا دورہ کیا اور دھماکے میں زخمی ہونے والے اہلکاروں کی عیادت کی اور جوانوں کے عزم اور بلند حوصلے کو سراہا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف نے زور دیتے ہوئے کہا کہ اس لعنت سے قوم کی حفاظت کے لیے پاک فوج دہشت گردی کے خلاف مضبوط کوششیں کرتی رہے گی۔

بیان میں کہا گیا کہ آرمی چیف نے افسران اور جوانوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ فوج، قانون نافذ کرنے والے ادارے اور قوم کبھی بھی دہشت گردوں کے بزدلانہ اقدام سے کمزور نہیں پڑے گی۔

انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کو غلط فہمی ہے کہ وہ جوانوں کے عزم اور ریاست کی رٹ کو چیلنج کر سکتے ہیں۔

جنرل عاصم منیر نے اپنے خطاب میں کہا کہ ہم نے طویل جنگ لڑی ہے اور دہشت گردی کے اس ناسور کے خاتمے تک جنگ جاری رکھیں گے۔

انہوں نے کہا کہ قوم ان بہادروں کو زبردست خراج عقیدت پیش کرتی ہے جنہوں نے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا اور ان کی قربانیوں کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں