سعودی عرب کی پاکستان کے توانائی کے شعبے میں بڑی سرمایہ کاری

سرمایہ کاری معاہدے کا اعلان آرامکو اور گو کی جانب سے منگل 12 دسمبر کو جاری ہونے والے ایک مشترکہ بیان میں کیا گیا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

تیل پیدا کرنے والی سعودی عرب کی سرکاری کمپنی سعودی آرامکو پاکستان میں گیس اینڈ آئل پاکستان لمیٹڈ کے 40 فیصد حصص خریدنے کا معاہدہ کرنے کے بعد پہلی مرتبہ پاکستان کی فیول ریٹیل مارکیٹ میں قدم رکھنے جا رہی ہے۔

ایک اعلامیہ کے مطابق سعودی عرب کی نمایاں تیل کمپنی آرامکو نے گیس اینڈ آئل پاکستان لمیٹڈ ( Go) میں 40 فیصد حصص کی خریداری کے معاہدے پر ریاض میں دستخط کر دیئے ہیں۔ سعودی عرب کی سرکاری کمپنی کی پاکستانی ایندھن کی خوردہ مارکیٹ میں قدم رکھنے کو ایک اہم پیشرفت کے قرار دیا جا رہا ہے۔

گو، سپلائی لائن کی نچلی سطح پر ایک متنوع ایندھن، لبریکنٹس اور ذخیرہ کی ملک میں سب سے بڑی خوردہ اور اسٹوریج کمپنیوں میں سے ایک ہے۔

آرامکو کا کہنا ہے کہ اس معاہدے سے اس کی مصنوعات کے لیے اضافی فروخت کے مواقع ملیں گے اور فروری 2023 میں ویلوولائن انکارپوریٹڈ کے عالمی مصنوعات کے کاروبار میں سرمایہ کاریکے بعد والوولائن برانڈڈ لبریکنٹس کے لیے مارکیٹ کے نئے مواقع پیدا ہوں گے۔ اس طرح سعودی تیل کمپنی کی بین الاقوامی سطح پر اپنی ڈاؤن اسٹریم ویلیو چین کو مضبوط بنانے کی حکمت عملی کو آگے بڑھایا جا سکے گا۔

آرامکو نے اپنے ڈاؤن اسٹریم صدر محمد وائی القحطانی کے حوالے سے ایک بیان میں کہا کہ اس سال ہمارا دوسرا منصوبہ آرامکو کے ڈاؤن اسٹریم کاروبار کو آگے بڑھانےکے ساتھ مطابقت رکھتا ہے۔

گو کمپنی کے پاس ذخیرہ کرنے کی قابل قدر گنجائش، اعلیٰ معیار کے اثاثے اور ترقی کی صلاحیت ہے، جس سے پاکستان میں آرامکو برانڈ کو شروع کرنے میں مدد کرے گی۔

آرامکو ایک عالمی مربوط توانائی اور کیمیکل کمپنی ہے جو دنیا کی تیل کی فراہمی کے ہر آٹھ بیرل میں سے تقریباً ایک پیدا کرتی ہے اور جدید توانائی کی ٹیکنالوجیز متعارف کرتی ہے۔

پاکستان کی آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) کی جانب سے پنجاب میں پیٹرولیم مصنوعات کی فروخت اور مارکیٹنگ شروع کرنے کی اجازت کے بعد گو کمپنی نے 2015 میں اپنا کام شروع کیا۔ کمپنی اس وقت پورے ملک میں ایک ہزار کے قریب پمپس چلا رہی ہے۔

یہ پیشرفت ایک ایسے وقت میں ہوئی ہے جب سعودی آرامکو پاکستان میں آئل ریفائنری اور پیٹرو کیمیکل کمپلیکس کے قیام کے لیے پہلے ہی پاکستانی حکام کے ساتھ بات چیت کر رہی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں