پاکستان نے فولاد سازی کے شعبہ کی سعودی کمپنی کے ساتھ انضمام کی منظوری دے دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستان کے مسابقتی کمیشن (سی سی پی) نے اس ہفتہ ایک اہم سعودی کمپنی کے ساتھ اپنے فولاد سازی کے شعبہ کو منسلک کرنے کا اعلان کیا ہے۔ سعودی کمپنی پاکستان کے فولاد سازی کے شعبے کو ریگولیٹ کرنے میں ممتاز حیثیت رکھتی ہے۔

ایم ایس سعودی آئرن اینڈ سٹیل کمپنی سٹیل کی مختلف اشیاء بناتی ہے اور پاکستان میں ان کی مارکیٹنگ کے لیے کام کرتی ہے۔ سعودی کمپنی جنوبی ایشیا کے علاوہ دنیا کے دیگر ملکوں کو بھی فولاد برآمد کرتی ہے۔

سیسی پی کی طرف سے ہفتہ کے روز جاری کیے گئے ایک پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ سعودی عرب کے پبلک انویسٹمنٹ فنڈ اور سعودی عریبیہ ساورن ویلتھ فنڈ نے پاکستانی مسابقتی کمیشن کو ایک درخواست بھیجی۔ جس میں حدید سٹیل ملز کے سو فیصد حصص خریدنے کی بات کی گئی تھی۔

سی سی پی نے بتایا کہ پی آئی ایف حدید نے اپنے 44 اعشاریہ 5 فیصد حصص میسرز محمد بن عبدالعزیز الراجی اینڈ سنز کو فروخت کرنے کو تیار ہے۔ تاکہ آپریشنل کارکردگی میں اضافہ ہوسکے اور پیداواری صلاحیت بڑھ سکے۔

سی سی پی کا کہنا ہے کہ ان حصص کے خڑید و فروخت سے متعلقہ مارکیٹ میں کسی قسم کے مسابقتی خدشات کا خدشہ نہیں ہے۔ پاکستان کا فولاد سازی کا شعبہ ملک کی اہم صنعتوں میں سے ایک ہے اور اس میں آنے والے سرمایہ کاروں کو فائدہ پہنچانے کے علاوہ ملک کی شرح نمو میں بھی اضافہ کا باعث بن سکتا ہے.

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں