.

شاہِ اردن کا العربیہ کے سعد السیلاوی کے لیے اعلیٰ ایوارڈ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

العربیہ نیوز چینل سے وابستہ تجربے کار صحافی سعد السیلاوی کو اردن کے شاہ عبداللہ دوم نے معاشرے کے لیے ان کی خدمات کے اعتراف میں اعلیٰ قومی ایوارڈ سے نوازا ہے۔

انھیں یہ ایوارڈ اردن کے یوم آزادی کے سلسلہ میں منعقدہ تقریب میں دیا گیا ہے۔اسی ہفتے وہ قریباً ایک سال کے وقفے کے بعد العربیہ ٹی وی پر دوبارہ نمودار ہوئے ہیں۔وہ گلے کے کینسر کا شکار ہوگئے تھے اور اس مہلک مرض کے خلاف ایک سال تک صبر آزما جنگ لڑتے رہے ہیں۔

انھوں نے صحت یاب ہونے کے بعد چینل کے مارننگ شو ''صباح العربیہ'' میں منگل کو شرکت کی۔انھوں نے بتایا کہ ان کے کینیڈا میں تین آپریشن ہوئے ہیں اور ان سے ان کی گلے کی غنائیت جاتی رہی ہے اور وہ اب ٹھیک طرح سے بولنے کے قابل نہیں رہے ہیں۔انھیں بولنے سے قبل گلے پر ہاتھ رکھنا پڑتا ہے۔

سعد السیلاوی نے آواز کی خوبصورتی سے محروم ہونے کے بعد اپنے چاہنے والوں سے کہا ہے کہ وہ ان کی آواز کے معیار پر نہ جائیں کیونکہ وہ کوئی گلوکار نہیں ہیں بلکہ ان کے الفاظ کو ملاحظہ کریں کہ وہ کیا کہہ رہے ہیں۔

وہ اردن میں العربیہ نیوز چینل کے علاقائی بیورو مینجر اور سینیر نامہ نگار ہیں۔انھوں نے 2003ء میں العربیہ نیوز چینل کے آغاز کے وقت اس میں ملازمت اختیار کی تھی اور اس سے دو عشرے قبل اپنا صحافتی کیرئیر شروع کیا تھا۔

وہ ایک طویل عرصے تک عراق میں رپورٹنگ کرتے رہے تھے اور انھوں نے دونوں خلیجی جنگجوں کے دوران عراق سے رپورٹنگ کی تھی۔وہ جنگ زدہ علاقوں میں وقائع نگاری کے طویل تجربہ کے حامل ہیں اور الجزائر میں بھی 1991ء میں آغاز ہونے والی خانہ جنگی کے دوران وقائع نگار کے طور پر کام کرچکے ہیں۔وہ فلسطینی علاقوں اور 2006ء میں لبنان پر مسلط کردہ اسرائیل کی جنگ کی بھی رپورٹنگ کرچکے ہیں۔

سعد سیلاوی اپنے صحافتی کیرئیر کے دوران مصر کے سابق صدر حسنی مبارک ،اردن کے مرحوم شاہ حسین اور تنظیم آزادیِ فلسطین کے لیجنڈ رہ نما مرحوم یاسرعرفات سمیت اہم عرب شخصیات کے انٹرویوز کرچکے ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ وہ ایک پیدائشی صحافی ہیں۔انھیں مرحوم یاسر عرفات اور شاہ حسین دونوں نے اپنا مشیر بننے کی پیش کش کی تھی لیکن انھوں نے اس مشیری پر صحافت کو ترجیح دی تھی۔

انھوں نے گلے کے سرطان سے صحت یاب ہونے پر اپنے دوستوں اور خاص طور پر ایم بی سی گروپ کے چئیرمین شیخ ولید الابراہیم اور العربیہ نیوز چینل کے جنرل مینجر عبدالرحمان الراشد کا شکریہ ادا کیا ہے جو جان لیوا مرض کے دوران ان کی ڈھارس بندھاتے رہے ہیں۔