.

سعودی عرب میں اصیل گھوڑوں کا ’میک اپ‘ کیسے کیا جاتا ہے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

آنکھوں میں کاجل، بالوں میں کنکھی، بالوں کی خوبصورتی کے لیے تیل، چہرے کی چمک دھمک کے لیے مختلف کریموں اور پاؤنڈرز کا استعمال، یہ سب کچھ کسی حسینہ کے اپنے حسن کو دوبالا کرنے کا عمل نہیں بلکہ عودی عرب میں اصیل گھوڑوں کو سنوارنے اور ان کا میک اپ ہے۔

آپ مانیں یا نا مانیں مگرسعودی عرب میں اصیل گھوڑوں کو مقابلوں کے لیے تیار کرتے وقت ان کے عارض ورخسار کو بھی جدید طریقوں سے پرکشش بنایا جاتا ہے۔

سعودی عرب میں اصیل گھوڑوں کے مقابلو کے نگران ترکی الخلطی نے ’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ کو بتایا کہ گھوڑوں کا میک اپ کرنے کا مقصد انہیں مقابلوں کے دوران زیادہ پرکشش بنا کر پیش کرنا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ گھوڑوں کو چمکانے کے لیے تیل سے ان کی مالش کی جاتی، آنکھوں میں سرمہ لگایا جاتا اور چہرے کو تازہ کرنے والی مواد سے خوبصورت بنایا جاتا ہے۔

ایک سوال کے جواب میں گھوڑوں کے مالک عبدالعزیز بوکنان نے کہا کہ گھوڑوں کے خوبصورت دکھائی دینے کی علامات میں سر کا چھوٹا نظر آنا، آنکھوں کا کھلی اور سیاہ ہونا، ان پر پلکوں کا مناسب ہونا، پنڈیا پھیلی ہونا اور گردن میں جھکاؤ جیسی علامات اہمیت کی حامل ہیں۔