طیارے میں بدبو کے باعث پرواز منسوخ کر دی گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

کسی فنی خرابی یا سکیورٹی وجوہات کی بنا پر کسی طیارے کی پرواز منسوخ کرنے کے واقعات تو رونما ہوتے رہتے ہیں مگر امریکا سے برطانیہ آنےوالی ایک پرواز کو محض جہاز میں بدبو کی وجہ سے منسوخ کردیا گیا۔

حکام نے برٹش ایئرویز کی ایک پرواز جو کہ امریکا سے برطانیہ جا رہی تھی جہاز میں بدبو کے باعث منسوخ کردی۔

برطانوی اخبار "دی سن" کی طرف سے شائع کردہ رپورٹ "العربیہ ڈاٹ نیٹ" کے مطالعے سے گذری ہے۔ اس رپورٹ کی تفصیلات کے مطابق طیارے کے اڑان بھرنے سے چند سیکنڈ قبل ہی پرواز میں خلل پڑا۔ برطانوی طیارے کو نیو یارک کے جے ایف کے ایئرپورٹ سے واپس جانا تھا جہاں لندن کا ہیتھرو ایئرپورٹ اس کی اگلی منزل تھی۔ طیارے کے اندر سے بدبو نکلے کی وجہ سے عملہ پرواز میں خلل ڈالنے کا فیصلہ کرنے پر مجبور ہوگیا۔

شدید بدبو نے لندن سے نیویارک جانے والی پرواز کے مسافروں کو بیمار ہونے کا احساس دلایا، جس کی وجہ سے فلائٹ کے عملے نے اس بدبو کی وجہ سے واپسی کی پرواز منسوخ کردی۔

برطانوی اخبار نے ایک باخبر ذریعے کے حوالے سے بتایا ہے کہ اس بو کی وجہ سے طیارے میں ’پنڈمونیم‘ کی کیفیت پیدا ہو گئی، کیونکہ مسافروں میں سے کوئی بھی نہیں جانتا تھا کہ کیا ہو رہا ہے۔

اخبار نے مزید کہا کہ "ایک پیکج کے پیچھے سے باہر کی پرواز پر ایک مخصوص بو کا پتہ چلا۔

اخباری رپورٹ میں "پولیس اور فائر فائٹرز نیو یارک میں تحقیقات کے لیے بورڈ پر آئے لیکن کسی بھی خطرناک دھوئیں کا پتہ نہیں لگا سکے، صرف ایک عجیب بو تھی جو ان کے منہ میں دھاتی ذائقہ بھر رہی تھی۔"

برٹش ایئرویز کے طیارے
برٹش ایئرویز کے طیارے

طیارہ کے اڑان بھرنے سے کچھ دیر قبل حکام نے فیصلہ کیا کہ طیارہ ٹیک آف کرنے کے لیے محفوظ نہیں ہے اور ذرائع نے مزید کہا کہ بالواسطہ اثرات ایئر لائن کے لیے بہت اچھے تھے۔

برٹش ایئرویز کے ترجمان نے کہا کہ "ہمارے صارفین اور عملے کی حفاظت ہمیشہ ہماری ترجیح ہے اور اس پر کبھی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔ ہم نے اپنے صارفین کو ہونے والی تکلیف کے لیے معذرت کی ہے اور متبادل پرواز یا مکمل رقم کی واپسی کی پیشکش کی ہے۔"

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں