وزن میں کمی کے لیے پانی اور لیموں کا استعمال افسانہ یا حقیقت؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

انٹرنیٹ ویب سائٹس اور پلیٹ فارمز تیزی سے وزن کم کرنے کے ٹپس سے بھرے پڑے ہیں۔ انسٹاگرام اور ٹک ٹاک پر بہت سی پوسٹوں اور ویڈیوز میں کہا گیا ہے کہ چربی کو جلانے کے لیے ایک آسان غذا کے طور پر پانی اور لیموں پینے سے چربی کم ہونے میں مدد ملتی ہے۔

لیکن کیا یہ "جادوئی" مشروب وزن کم کرنے کے لیے واقعی کارآمد ہے یا محض ایک بے بنیاد افسانہ ہے؟۔

اس کا جواب دیتے ہوئے ورجینیا میں غذائیت کی ماہر کیرولین تھامسن نے انکشاف کیا کہ لیموں کا پانی قدرتی طور پر نمی بخش اور تیزابیت کی خصوصیات کا حامل ہے۔ ایسی خصوصیات جو اسے پینے کے بعد انسان کو باتھ روم جانے پر مجبور کر سکتی ہیں۔

انہوں نے وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ "اگر کوئی شخص باتھ روم جانے سے پہلے اور بعد میں اپنا وزن کرتا ہے تو اسے یقینی طور پرمعلوم ہو سکتا ہے کہ اس کا وزن کم ہو گیا ہے، لیکن اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ صبح لیموں پانی پینے سے وزن میں جادوئی کمی واقع ہوتی ہے۔

جادوئی مشروب کا افسانہ

کیرولین تھامسن نے کہا کہ اسے یقین نہیں ہے کہ یہ افسانہ کہاں سے شروع ہوا؟۔ ایسا کوئی جادوئی کھانا یا مشروب نہیں ہے جو جسم کی چربی کو کم کرنے میں مدد دے سکے۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ کچھ بورنگ باتیں وزن کم کرنے کا مؤثر طریقہ بنی ہوئی ہیں۔ یہ دو اہم عوامل ہیں جو وزن کم کرنے میں مددگار ہوسکتے ہیں۔ ان میں صحت مند غذا کی پیروی کرنا اور وزن کم کرنے کے لیے ورزش کرنا ہے"۔

جب کہ ان کا کہنا تھا کہ پانی اور لیموں پینے کے فوائد صرف جسم کو وٹامن سی اور پوٹاشیم فراہم کرنے اور جسم کی ہائیڈریشن کو برقرار رکھنے تک محدود ہیں۔

جبکہ کچھ تحقیقات یہ بتاتی ہیں کہ کھانے سے پہلے پانی پینا انسان کو پیٹ بھرنے اور اس طرح کم کھانے میں مدد دیتا ہے۔

غذائیت کے ماہرین کا کہنا ہے کہ اس بات کا کوئی خاص ثبوت نہیں ہے کہ پانی میں لیموں ملانے سے انسان کا وزن کم ہوجائے گا۔

3 بنیادی نکات

تھامسن نے اس بات پر زور دیا کہ جو لوگ وزن کم کرنا چاہتے ہیں۔ انہیں روزانہ طرز زندگی میں تبدیلی کے ساتھ شروع کرنا چاہیے جیسے کہ ورزش کرنا، چہل قدمی اور طاقت کی ورزشیں، ہفتے میں کئی بار ورزش کرنا اور کارڈیو ورزش کو بڑھا کر ہفتے میں 150 منٹ تک کرنا شامل ہے۔

پروٹین پر توجہ مرکوز کرنے والی غذا پر عمل کرنا، پھلوں اور سبزیوں کو بڑھانا، بہتر اناج کو پورے اناج سے بدلنا اور صحت مند چکنائیوں کو خوراک میں شامل کرنا فائدہ مند ثابت ہوتا ہے۔

اس کے علاوہ کھانے کی عادات کے بارے میں آگاہی کھانے کو ٹریک کرنے اور روزانہ استعمال ہونے والی کیلوریز کا بہتر اندازہ حاصل کرنے میں مدد کرتی ہے۔

اگرچہ کچھ ماہرین کو خدشہ ہے کہ روزانہ کیلوریز کو ٹریک کرنے پر بہت زیادہ توجہ مرکوز کرنا کھانے کی خرابی کا باعث بن سکتا ہے مگر مسز تھامسن نے توجہ دلائی کہ یہ صحت مند غذا بنانے میں بھی مددگار ثابت ہو سکتی ہے۔

سینے اور معدے میں جلن کا احساس

انہوں نے خبردار کیا کہ پانی اور لیموں تیزابی مشروبات ہیں جو کچھ لوگوں کے لیے جلن کا سبب بن سکتے ہیں، خاص طور پر ان لوگوں کے لیے جو تیزابیت کا شکار ہیں۔

تحقیق یہ بتاتی ہے کہ لیموں میں پایا جانے والا سٹرک ایسڈ طویل عرصے تک باقاعدگی سے کھانے سے دانتوں کو بھی ختم کر سکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں