.

مسجد حرام کے نزدیک مشرق وسطی کی سب سے بڑی اسمارٹ کار پارکنگ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

خادم حرمین شریفین کے مشیر اور مکہ مکرمہ کے گورنر شہزادہ خالد الفیصل نے اتوار کی صبح مکہ کے محلے سلیمانیہ کے علاقے المرکزیہ میں اسمارٹ پارکنگ کی عمارت کا افتتاح کیا۔

شہزادہ خالد نے جائے مقام پر پہنچنے کے بعد منصوبے کی یادگاری تختی سے پردہ ہٹایا۔ بعد ازاں گورنر کو منصوبے کے اہداف اور دیگر تفصیلات سے آگاہ کیا گیا۔ منصوبے کا مقصد شہریوں اور بیت اللہ کے زائرین کے لیے بہتر خدمت اور سہولت فراہم کرنا ہے۔ شہزادہ خالد نے اسمارٹ پارکنگ کے استعمال کے طریقے کی جان کاری حاصل کرنے کے لیے ایک وڈیو پریزینٹیشن بھی دیکھی۔

مکہ کے گورنر نے اسمارٹ پارکنگ کے ایک اور منصوبے کا سنگ بنیاد بھی رکھا۔ یہ پارکنگ الجمیزہ کے علاقے میں المعلاہ قبرستان کے شمالی داخلی راستے پر بنائی جائے گی۔ اس کا رقبہ 1920 مربع میٹر ہو گا اور اس میں 528 پارکنگ کی گنجائش ہو گی۔

دوسری جانب مکہ مکرمہ صوبے کے سکریٹری انجینئر محمد القویحص نے بتایا ہے کہ افتتاح کی جانے والی اسمارٹ پارکنگ کی عمارت حرم مکی کے نزدیک ہے۔ یہ عمارت 13 منزلوں پر مشتمل ہے اور یہاں پارکنگ کی مجموعی گنجائش 550 ہے۔

القویحص کے مطابق عمارت میں گاڑیوں کے داخلے کے لیے 10 گیٹ ہیں۔ ان کے علاوہ عمارت میں انتظار گاہیں اور بیت الخلا بھی بنائے گئے ہیں۔

سکریٹری کے مطابق عمارت میں بہترین جدید ترین ٹکنالوجی کا استعمال کیا گیا ہے۔ یہ عمارت مشرق وسطی میں گاڑیوں کی خود کار پارکنگ کا سب سے بڑا کمپاؤنڈ شمار کیا جا رہا ہے۔ یہاں گاڑیوں کے حجم اور وزن کی پیمائش کے بعد پارکنگ کے اندر مخصوص جگہ پہنچا دیا جاتا ہے۔