ڈرون حملے: دستاویزات عوام کو دکھائی جائیں: اعلی امریکی عدالت

ڈرون پروگرام سے متعلق جنوری 2013 میں کیا گیا عدالتی فیصلہ کالعدم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

امریکا کی وفاقی اپیل کورٹ نے دنیا کے مختلف ممالک میں امریکی سکیورٹی اداروں کی طرف سے استعمال کیے جانے والے ڈرون میزائلوں کے بارے میں خفیہ دستاویزات عوام کے سامنے لائے کا حکم دیا ہے، تاکہ ان حملوں کا جواز معلوم ہو سکے۔

امریکی فیڈرل اپیل کورٹ نے یہ حکم نیو یارک ٹائمز سے وابستہ صحافیوں کی طرف سے اطلاعات کی آزادی کے حوالے سے دائر کردہ درخواست کی بنیاد پر دیا ہے۔ امریکی سول لبریٹیز یونین نے بھی عدالت میں دائر کردہ اس درخواست کی حمایت کی تھی۔

یہ درخواست یمن میں ستمبر2011 کے دوران کیے گئے ڈرون حملوں کے بعد پیش کی گئی تھی جن میں امریکی شہری انور الاولاکی اور سمیر خان مارے گئے تھے، جبکہ انور الاولاکی کو نوعمر بیٹا عبدالرحمان اکتوبر2011 میں ہلاک ہو گیا تھا۔ واضح رہے یہ تنیون ہلاک شدگان امریکی شہری تھے۔

انسانی حقوق سے متعلق گروپوں کا کہنا ہے کہ ڈرون حملوں کا پروگرام اب بھی رازداری میں لپٹا ہوا ہے اور اس کو راز رکھنے کی حدود قانونی اعتبار سے واضح نہیں ہیں۔ دوسری جانب امریکی حکام کا کہنا ہے کہ ڈرون پروگرام بڑی احتیاط سے ہینڈل کیا جا رہا ہے اور اس کی بدولت القاعدہ کو کمزور کر دیا گیا ہے۔

وفاقی اپیل کورٹ نے ان حقائق کو بنیاد بناتے ہوئے جو مختلف بیانات اور تقاریر میں بطور خاص صدر براک اوباما کی طرف سے کیے گئے تھے۔ ان بیانات میں امریکی اٹارنی جنرل، ایرک ہولڈر اور سی آئی اے سربراہ جان برنین سے بھی منسوب تھے۔

محکمہ قانون کے جاری کردہ قرطاس ابیض کا حوالہ دیتے ہوئے جج جان نیومین نے فیصلے میں لکھا ہے"قانونی تجزیے کو حاصل تحفظ اعلی افسران کے کھلے عام بیانات کے بعد ختم ہو گیا ہے، جس کے بعد گذشتہ برس جنوری میں حکومت کی ہمنوائی میں دیا گیا فیصلہ اب برقرار نہیں رہ سکے گا۔

یوں جنوری 2013 میں دیا گیا ایک عدالتی فیصلہ نیو یارک ٹائمز سے وابستہ صحافیوں کی اپیل پر امریکی وفاقی عدالت نے ختم کر دیا ہے۔ واضح رہے جنوری 2013 کا فیصلہ حکومتی موقف کو تقویت دیتا تھا۔ واضح رہے امریکی ڈرون حملوں کا سب سے اولین ہدف پاکستان کے قبائلی علاقے بنے ہے ہیں جن کی وجہ سے بے سینکڑوں بے گناہ بھی ما رے گئے ہیں۔ اب ان ڈرون کا اہم ہدف یمن بن گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں