.

طرابلس ائر پورٹ کی تباہی کے ہولناک مناظر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لیبیا کے دارالحکومت طرابلس کے مرکزی ہوائی اڈے پر"فجر لیبیا" نامی عسکریت پسند تنظیم کے قبضے کے بعد ہوائی اڈے کی تباہی اور بربادی کے خوفناک مناظر سامنے آئے ہیں۔

فرانسیسی خبر رساں ایجنسی"اے ایف پی" کے فوٹو گرافر نے اپنے کیمرے میں تباہ حال ہوائی اڈے کی کچھ تصاویر محفوظ کی ہیں، جس سے ائیر پورٹ اور اس میں کھڑے طیاروں کی تباہی کا اندازہ ہوتا ہے۔


دلچسپ بات یہ ہے کہ گذشتہ روز "فجر لیبیا" نامی عسکریت پسند گروپ کی جانب سے صحافیوں کو طرابلس کے ہوائی اڈے کے دورے کی اجازت دی گئی تھی۔ ایسا پہلی مرتبہ ہوا ہے کہ کسی عسکریت پسند گروپ کی جانب سے صحافیوں کو کسی اہم مقام تک برہ راست رسائی دی گئی ہو۔

اے ایف پی کے کیمرہ مین نے بتایا کہ ہوائی اڈے میں مسافروں کی انتظار گاہ آتشزدگی کے باعث مکمل طور پر تباہ ہو چکی ہے تاہم ہوائی اڈے کا مرکزی رن وے محفوظ ہے۔ رن وے پر کھڑے مختلف ملکوں اور فضائی کمپنیوں کے ہوائی جہاز بری طرح ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں۔ ہوائی جہازوں پر کیے گئے راکٹ حملوں اور گولیوں کے نشان صاف دکھائی دے رہے ہیں۔ تاہم بعض طیارے کسی حد تک محفوظ بھی رہے ہیں۔

خیال رہے کہ حال ہی میں "فجر لیبیا" نامی ایک عسکری گروپ نے الزنتان ملیشیا سے دس دن کی لڑائی کے بعد طرابلس کے مرکزی ہوائی اڈے پر قبضہ کر لیا تھا۔ الزنتان ملیشیا نے سنہ 2011ء میں کرنل معمر قذافی کی ہلاکت کے بعد ہوائی اڈے کا کنٹرول سنبھالا تھا۔