.

پیرس :مسلح شخص پولیس کے سامنے سرنڈر

نواحی علاقے کولمبس میں واقع ڈاک خانے سے دونوں یرغمالی بازیاب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانس کے دارالحکومت پیرس کے نواح میں واقع شہر کولمبس میں ایک ڈاک خانے میں دو افراد کو یرغمال بنانے والے مسلح شخص نے خود کو پولیس کے حوالے کردیا ہے اور اس کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

اس مسلح شخص کے از خود ہتھیار ڈالنے کے بعد فرانسیسی پولیس کو گولی چلانے یا یرغمالیوں کی بازیابی کے لیے کارروائی کرنے کی نوبت پیش نہیں آئی ہے۔ پولیس کے ایک ذریعے نے اے ایف پی کو بتایا ہے کہ دونوں یرغمالی رہائی کے بعد صدمے کی کیفیت میں تھے لیکن انھیں کوئی زخم نہیں آئے ہیں۔

فرانسیسی میڈیا کے مطابق پولیس نے اطلاع ملتے ہی پیرس سے شمال مغرب میں واقع شہر کولمبس میں اس ڈاک خانے کا محاصرہ کر لیا تھا جہاں مسلح شخص نے دو افراد کو یرغمال بنا رکھا تھا اور ایک ہیلی کاپٹر کو اس دوران فضا میں پرواز کرتے ہوئے دیکھا گیا ہے۔

پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ جمعہ کی صبح ڈاک خانے میں مسلح شخص کی دراندازی کے وقت بہت سے لوگ موجود تھے لیکن وہ وہاں سے بھاگ جانے میں کامیاب ہوگئے۔حملہ آور کلاشنکوف اور دستی بموں سے مسلح تھا اور وہ ٹوٹے پھوٹے الفاظ میں بے ترتیب گفتگو کررہا تھا۔

فرانس کے بی ایف ایم ٹی وی نے ایک غیر شناختہ ذریعے کے حوالے سے کہا ہے کہ ڈاک خانے میں دو شہریوں کو یرغمال بنانے کے اس واقعے کا گذشتہ ہفتے پیرس میں توہین آمیز خاکے شائع کرنے والے اخبار چارلی ہیبڈو اور یہود کے ملکیتی ایک سپر اسٹور پر مسلح جنگجوؤں کے حملوں سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ان حملوں میں سترہ افراد ہلاک ہوگئے تھے۔دہشت گردی کے ان واقعات کے بعد سے پیرس میں سکیورٹی ہائی الرٹ ہے۔قبل ازیں جمعہ کو پولیس نے مختلف چھاپہ مار کارروائیوں کے دوران بارہ مشتبہ افراد کو گرفتار کر لیا ہے۔