.

لیبیا:دارالحکومت طرابلس میں بم دھماکا

وزارت خارجہ کے نزدیک واقع پولیس تھانے کی عمارت جزوی طور پر تباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لیبیا کے دارالحکومت طرابلس میں ایک پولیس تھانے میں بم دھماکا ہوا ہے جس سے تھانے کی عمارت کا ایک حصہ تباہ ہوگیا ہے اور متعدد کاروں کو نقصان پہنچا ہے۔

لیبی حکام کے مطابق پولیس تھانے کی عمارت طرابلس کے وسط میں وزارت خارجہ کے نزدیک واقع ہے۔فوری طور پر دھماکے کی وجہ معلوم نہیں ہوسکی۔البتہ لیبیا کی نیوز ویب سائٹس کی اطلاع کے مطابق دھماکا کار بم حملے کے نتیجے میں ہوا ہے۔اس میں کسی جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔

طرابلس میں گذشتہ سال اگست سے مختلف جنگجو گروپوں پر مشتمل فجر لیبیا کی حکومت قائم ہے لیکن اس حکومت کو دنیا کے دوسرے ممالک تسلیم نہیں کرتے جبکہ بین الاقوامی طور پر تسلیم شدہ حکومت کےدفاتر مشرقی شہر طبرق میں قائم ہیں اور پارلیمان بھی وہیں اپنے اجلاس منعقد کررہی ہے۔

طرابلس میں حالیہ مہینوں کے دوران غیرملکی مشنوں پر متعدد بم حملے کیے گئے ہیں اور دولت اسلامی عراق وشام (داعش) سے وابستہ جنگجو گروپ نے ان حملوں کی ذمے داری قبول کی ہے۔تاہم طرابلس کے حکام نے سابق صدر معمر قذافی کے وفاداروں پر ان حملوں کا الزام عاید کیا ہے۔بہت سے مغربی اور عرب ممالک نے لیبی دارالحکومت میں متحارب جنگجو گروپوں کے درمیان خونریز جھڑپوں کے بعد اپنے سفارت خانوں کو خالی کردیا ہے اور اپنے سفارتی عملے کو واپس بلا لیا ہے۔